AMD

AMD

AMD کونسی بیماری ہے؟

عمر بڑھنے کے جسم جو کمزوریاں پیدا ہوتی ہیں یہ بیماری بھی انہی میں سے ہے۔ اِسی لئے یہ بیماری بڑی عمر کے لوگوں میں ہوتی ہے۔ اِس بیماری میں بھی پردۂ بصارت کا درمیانی حصہ خراب ہو جاتا ہے۔ شروع میں آنکھ کے پردے میں سفید دھبے بننا شروع ہوتے ہیں۔ دراصل کچھ کیمیاوی مادوے پردے کی تہوں میں جمع ہونے لگتے ہیں جو سفید یا ہلکے پیلے رنگ کے ہوتے ہیں۔ اِن مادوں کے مجموعوں کو Drusen کہا جاتا ہے۔ نیچے کی تصویر میں بیماری کی ابتدائی سٹیج نظر آ رہی ہے:

نیچے کی تصویر میں وہ آنکھ دکھائی گئی ہے جس میں شروع سے ہی پردے کا درمیانی حصہ یعنی میکیولا خراب ہو رہا ہے:

مزید خراب ہونے پردرج ذیل شکل اختیار کر لیتی ہے:

اِس پردے کا مرکزی حصہ نارمل نہیں رہا پیلاہٹ مائل سفید رنگ کی جھلیاں نظر آ رہی ہیں۔ اِن جِھلّیوں کے اندر خون کی ایسی نالیاں نظر آ رہی ہیں جو نارمل پردے میں نہیں ہوتیں۔ یہ نالیاں بڑی نازک سی ہوتی ہیں اور بعض اوقات اِن میں سے کوئی پھٹ بھی جاتی ہے جس سے پردۂ بصارت کے نیچے خون اکٹھا ہو جاتا ہے۔ نیچے تصاویرمیں جِھلّی کے ساتھ خون بھی نظر آ رہا ہے:

خون کی  مزید گہری تہہ بن جائے تو یوں نظر ّتی ہے:

 خون جذب ہو کر شکل اس طرح بن باتی ہے:

AMD کا علاج کیا ہوتا ہے؟

 اِس بیماری کے علاج کے سلسلے میں ایک بات تو یاد رکھنے کی یہ ہے کہ چونکہ اِس بیماری کا تعلق اُن تبدیلیوں سے ہے جو عمر زیادہ ہونے سے آتی ہیں اِس لئے اِس کا کوئی مستقل علاج شاید نہ ہی مل سکے۔ ابھی تک کوئی ایسا علاج نہیں ہے جو اِس بیماری کو مستقل اور مکمل طور پر صحیح کر دے۔ البتہ اِس بیماری کے اثراتِ بد کو کم کیا جا سکتا ہے اور اِس کی وجہ سے پیدا ہونے والی پریشانیوں میں کمی لائی جا سکتی ہے۔

  • سب سے ضروری تو یہ ہے کہ عمومی صحت پر توجہ دی جائے۔ متوازن غذا لی جائے خاص طور پر وٹامنز کی کمی کو نہ پیدا ہونے دیا جائے۔ اور بالکل سُستی اور کاہلی والی زندگی نہ گذاری جائے۔ روزانہ معقول مقدار میں جسمانی سرگرمیوں میں وقت صرف کیا جائے مثلاً پیدل چلا جائے، وغیرہ۔
  • Antioxidentsکا استعمال مناسب مقدار میں کیا جائے۔ اِس کیلئے آسان طریقہ یہ ہے کہ پھلوں کا استعمال کیا جائے۔
  • اگرنظر کی کمزوری کا نہ بھی شک ہو رہا ہو تو بھی آنکھوں کا معائنہ کرواتے رہنا چاہئے کیونکہ بڑی عمر کئی قسم کے مسائل ہوتے ہیں جن کو شروع میں پکڑ لیا جائے تو بڑی پیچیدگیوں سے بچا جا سکتا ہے۔
  • اگر نظر میں کمزوری محسوس ہونے لگے خصوصاً پڑھنے میں یا سامنے کی نظر میں تو چیک کروائیں۔ ہو سکتا ہے Wet AMD کا آغاز ہو رہا ہو۔
  • جب یہ بیماری شروع ہو جاتی ہے تو بعض مریضوں کو Anti-VEGFٹیکوں کی ضرورت پڑتی ہے۔ جو کئی مریضوں کو لمبی مدت تک لگوانے پڑتے ہیں۔
  • ایک طریقہ خاص قسم کی شعاعوں سے علاج کرنے کا بھی ہے جسےPTTکہتے ہیں۔ اِس میں خاص قسم کا انجیکشن لگا کر مخصوص شعاعیں لگائی جاتی ہیں۔ کئی مریضوں میں یہ مفید ہوتا ہے۔
  • اگر اچانک نظر بہت زیادہ کم ہو جائے تو چیک کروائیں ہو سکتا ہے پردے کے نیچے خون آ گیا ہو۔ اِس صورت میں مختلف طریقوں سے علاج کیا جاتا ہے۔ اُن میں ایک طریقہRetinopexy  یعنی گیس کا ٹیکہ آنکھ میں لگانے کا بھی ہے۔ اُس کے پریشر سے خون جلدی جذب ہو جات ہے۔
  • جن مریضوں جھلّیوں کا مسئلہ ہو جائے اُن کے لئے بعض اپریشن بھی مفید ہوتے ہیں۔