پردہ بصارت میں کیا خرابی پیدا ہو جاتی ہے؟

پردہ بصارت میں کیا خرابی پیدا ہو جاتی ہے؟

پردہ ٔبصارت کی خرابی کی نوعیت کیا ہوتی ہے؟

  • پردۂ بصارت کی دو پرتیں ہوتی ہیںجو ایک دوسرے سے علیحدہ ہو جاتی ہیںاور اُن کے درمیان پانی بھر جاتا ہے، اِسے کہا جاتا ہے۔یہ ز یادہ تر پردۂ بصارت میں سوراخ ہو جانے یا پھٹ جا نے کے باعث ہو تا ہے۔
  • پردۂ بصارت میں موجود خون کی نالیاں خراب ہو جانے کے باعث پردے کے مختلف حصوں میں خون کے اجزاء رِس رِس کر پردے میں سوجن پیدا کر دیتے ہیں جس سے پردے کی حساسیت متاثر ہوتی ہے اور بینا ئی کم ہو جا تی ہے۔
  • پردے کا مرکزی حصہ یعنی میکولا Maculaکے متاثر ہونے سے بالخصوص قریب کی نظر متاثر ہوتی ہے، چیزیں ٹیڑھی نظر آنے لگتی ہیں، علاوہ ازیں زیادہ خرابی کی صورت میں چیزوں کی پہچان مشکل ہو جاتی ہے ۔
  • خون کی نالیوں کے خراب ہونے سے پردے کو خوراک نہیں ملتی خاص طور پر اس کی آکسیجن کی ضرورت پوری نہیں ہو پاتی جس سے پردے کے اوپر اور وٹیریس کے اندر جھلیاں بننی شروع ہو جاتی ہیں، جو نظر کو متا ثر کر تی ہیں۔
  • ان جھلیوں سے وقتاً فوقتاً خون کی کوئی نالی پھٹ جاتی ہے جس سے بعض اوقات پردے کے اوپر خون کی تہہ جم جاتی ہےاور بسا اوقات وٹیریس کا پورا خانہ خون سے بھر جاتا ہے اِس کیفیت کو کہا جاتا ہے۔
  • یہ جھلیاں آہستہ آہستہ پردے کے بعض حصوں کو اپنی جگہ سے اکھاڑ دیتی ہیں بعض اوقات پردے کا کوئی حصہ پھٹ بھی جاتا ہے جس سےپردہ اُکھڑ جاتا ہے۔

آنکھوں کے بارے میں اپنے سوال کو لکھیں اور ہمیں بھیجھیں انشاء اللہ آپ کی رہنمائی کی جائے گی۔

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: