Refractive errors نظر کی کمزوری: وجوہات، علاج

نظر کیوں کمزور ہوتی ہے؟

نظر کی کمزوری کی مختلف وجو ہات ہوتی ہیں مثلاً بڑ ھاپا، چوٹ آ جانا، شو گر کی بیماری، وغیرہ لیکن چالیس سال کی عمر سے پہلے سب سے زیادہ لوگوں کی کمزوری کی بنیادی وجہ آنکھ کی ساخت میں تنوّع کا پایا جانا ہے۔

آپ دیکھتے ہیں کہ اللہ تعالٰی نے اِس کائنات میں ہر لحاظ سے بہت زیادہ ورائیٹی پیدا کی ہے؛ اگر پھول ہیں تو رنگ برنگے، اگر پرندے ہیں تو طرح طرح کے۔ اِسی طرح آنکھوں کی ساخت بھی وہ سب کی ایک جیسی نہیں بناتا اس میں بھی تنوع پایا جاتا ہے۔

جب کوئی بچہ عمر کے ساتھ بڑا ہوتا ہے تو اُس کے جسم کے سارے اعضاء میں نمو کے باعث تبدیلیاں آتی ہیں؛ ہاتھ بڑے ہو جاتے ہیں پیر بڑے ہو جاتے ہیں وغیرہ وغیرہ۔ اِسی نمو کے نظام کے زیرِ اثر آنکھیں بھی نشوونما کے عمل سے گزرتی ہیں۔

  • اس نشوونما کے دوران بعض بچوں کی آنکھ کے کرے کی لمبائی نارمل سائز سے زیادہ بڑی ہو جاتی ہے، جبکہ بعض بچوں کی آنکھوں کی لمبائی مطلوبہ سائز سے چھوٹی رہ جاتی ہے۔
  • اِسی طرح کئی بچوں کے قرنیہ کی اُفقی اور عمو دی گو لا ئی میں فرق ہو تا ہے۔
  • بعض بچوں کی آنکھ کا عدسہ نارمل سائز یا شکل کا نہیں ہوتا۔

اِن سب صورتوں میں آنکھ کا شعاعوں کو فوکس کرنے کا اندرونی نظام صحیح کام نہیں کر پاتا۔ اِن نقائص والی آنکھوں جو تصویر آنکھ کے پردے کے اوپر بنتی ہے وہ دُھندلی سی [آﺆ ٹ آف فوکس] ھوتی ہے۔ چنانچہ دماغ کو یہ فیصلہ کرنے میں مشکل ہوتی ہے کہ وہ کیا دیکھ رہا ہے۔

  • اگر فوکس تھوڑا خراب ہو تو دماغ آنکھ کے فوکس کرنے کے نظام میں تبدیلیاں لا کر کافی حد تک فوکس کرنے میں کامیاب ہو جاتا ہے۔ لیکن اِس صورتِ حال میں چونکہ لاشعوری سطح پر پٹھوں اور اعصاب کا زور لگ رہا ہوتا ہے اِس لئے آنکھوں پر دباوٴ محسوس ہوتا ہے، سر بھاری ہونے لگتا ہے، آدمی جلدی تھک جاتا ہے۔ 
  • اگر دھندلاپن بہت زیادہ ہو یا ایک آنکھ میں بہت زیادہ ہو تو پھر ایسے بچوں کی ایک آنکھ کام کرنا سیکھ ہی نہیں پاتی جس سے وہ پوری زندگی کے لئے عملاً ناکارہ ہو جاتی ہے۔ اِس کیفیت کو Amblyopia کہتے ہیں۔    
  • اس کے علاوہ اعصاب اور عضلات کے غیر متوازن استعمال سے بہت سے بچوں میں بھیگاپن پیدا ہو جاتا ہے۔

چونکہ فوکس کرنے کے نظام کے اِن نقائص کو مختلف طریقوں سے ٹھیک کیا جا سکتا ہے جس سے صاف نظر آ نا شروع ہو جاتا ہے۔ اِس لئے ہم کہہ سکتے ہیں کہ زیا دہ تر بچوں میں نظر کی کمزوری بیما ری نہیں کہلا سکتی بلکہ اس کو قدرت میں پائے جانے والے تنوع کی ایک شکل کہہ سکتے ہیں۔ یہ بالکل  ایسے ہی ہے جیسے کسی کے رنگ کے سانولا ہو نے کو ہم بیماری نہیں کہہ سکتے۔

نظر کا معائنہ کیا جا رہا ہے

عام خیال ہے کہ جب پڑھائی کا بوجھ پڑتا ہے تونظر کمزور ہونا شروع ہوجاتی ہے کیا یہ صحیح ہے؟ کیا پڑھائی بچوں کی آنکھوں کے لئے نقصان دہ ہے؟ کئی بچے بہت چھوٹی عمر بھی لگائے پھرتے ہیں۔ نظر کمزور ہونے کا کس عمر میں زیادہ خطرہ ہوتا ہے؟   

نظر کی کمزوری کا اِظہار پہلی دفعہ کب ہو گا یہ مختلف لو گوں میں مختلف ہو تا ہے۔ البتّہ چونکہ بچوں کی عمر کے دو حصّے ایسے ہیں جن میں اُن کا جسم تیزی سے بڑھنا شروع کر دیتا ہے؛ ایک تو 10 سے 12 سال کی عمر ہے اور دوسری 16 سے 18 سال کی عمر۔ چونکہ بچوں کی نظر کی کمزوری کا گہرا تعلق آنکھ کی گروتھ سے ہے یعنی انہی دنوں میں آنکھ بھی باقی جسم کی طرح تیزی سے بڑی ہوتی ہے۔ جب غیر متناسب گروتھ ہوتی ہے تب ہی پہلی دفعہ فوکس خراب ہونا شروع ہوتا ہے اور علامات پیدا ہونا شروع ہوتی ہیں چنانچہ بچوں کی عمر کے یہی دو حصے ایسے ہیں جن میں یا تو پہلی دفعہ نظر کی کمزوری ظاہر ہوتی ہے یا اچانک اُس کی مقدار بدلنا شروع ہو جاتا ہے۔ زیادہ تر تو عینک کا نمبر بڑھتا ہی ہے لیکن کئی بچوں کا خود بخود کم بھی ہونا شروع ہو جاتا ہے۔ 

حقیقت یہ ہے کہ پڑھنے سے نظر کمزور نہیں ہوتی لیکن پڑھنے والے بچوں کی نظر کی کمزوری ظاہر ہو جاتی ہے کیونکہ جب وہ پڑھائی کرتا ہے تو علامات ولدین کو مجبور کر دیتی ہیں کہ بچے کو چیک کروائیں۔ جو بچے پڑھائی نہیں کرتے نظر اُن کی بھی کمزور ہوتی ہے لیکن اُن میں علامات پیدا نہیں ہوتیں اِس پتہ نہیں چلتا۔ البتہ جدید تحقیقات اِس بات کی تصدیق کر رہی ہیں کہ پڑھائی کے بعض ایسے طریقے ضرور ہیں جو نظر کی کمزوری کا باعث بن سکتے ہیں۔

  • اِن میں سب سے اہم کمپیوٹر کا بہت زیادہ استعمال ہے۔
  • اِسی طرح جو بچے حفط کرتے ہوئے لمبے لمبے عرصے کے لئے نزدیک نظر کو مرکوز کیے رکھتے ہیں اُن میں نظر کمزور ہو جانے کا امکان بہت بڑھ جاتا ہے۔
  • جو بچے گھنٹوں ٹی وی کے سامنے بیٹھے کارٹون دیکھتے رہتے ہیں اُن میں بھی ی خطرہ بہت بڑھ جاتا ہے کہ اُن کی نظر کمزور ہو جائے گی۔  

بعض بچے ایسے بھی ہوتے ہیں جن کی پیدا ہوتے وقت ہی نظر بہت زیادہ کمزور ہوتی ہے یا ابتدائی ایام میں ہی بہت زیادہ کمزور ہو جاتی ہے۔ ایسے بچوں کو نابینا ہونے سے بچانے کے لئے عینک ناگزیر ہوتی ہے۔ 

اِس لئے اِس بارے میں کچھ نیہں کہا جا سکتا کہ کس عمر میں بچے کی نظر کمزور ہونے کا خطرہ زیادہ ہے۔ یہ قسمت کی بات ہے۔ اِسی لئے جہاں ممکن ہو وہاں یہ اہتمام کیا جاتا ہے کہ بغیر علامات کے بھی بچوں کی نظر کا معائنہ کیا جائے۔ نظر تو پہلے کمزور ہوتی ہے علامات تو بہت بعد میں پیدا ہوتی ہیں۔ اور بعض کیفیات مثلاً Amblyopia، بھینگا پن کو پیدا ہونے سے بچایا تو جا سکتا ہے لیکن جب پیدا ہو جائیں تو علاج بہت مشکل ہو جاتا ہے۔ اور اِن سے بچانا تب ہی ممکن ہے جب نظر کی کمزوری بالکل شروع شروع میں ہی پکڑی جائے۔  

بچوں کے معاملے میں کونسی احتیاطیں کی جائیں کہ اُن کی نظر بھی کمزور نہ ہو اور اُن کی پڑھائی بھی متاثر نہ ہو؟

اصل میں نظر کو کمزور ہونے سے بچانے کے لئے تو وہی احتیاطیں ہو سکتی ہیں جو ابھی بتائی گئی ہیں کہ اُن حالات سے بچوں کو بچایا جائے جن سے نظر کمزور ہو جانے کا خدشہ زیادہ ہو جاتا ہے مثلاً کمپیوٹر چلانے، گیمیں کھیلنے، اور کارٹون فلمیں دیکھنے پر غیر متوازن وقت صرف نہیں ہونا چاہئے۔ اور جب بچے یہ کام کریں تو اِس بات سختی سے اہتمام کیا جائے کہ وہ یہ کام وقفوں سے کریں۔ یہ وقت بغیر موزوں وقفوں کے یا بہت طویل نہیں ہونا چاہئے۔ اِسی ویبسائیٹ پر کمپیوٹر کے استعمال کے دوران ضروری احتیاطوں کا مضمون موجود ہے اُس کا مطالعہ کریں۔  

اِس سے بھی زیادہ ضروری بات یہ ہے کہ جب معلوم ہو جائے کہ بچے کی نظر کمزور ہے تو پھر عینک کے استعمال میں بےاحتیاطی نہ کی جائے تاکہ نظر کے مزید کمزور ہونے، سردرد اور عدمِ ترکیز جیسی علامات، اور نئی بیماریوں مثلاً بھینگا پن اور Amblyopia سے بچے کو بچایا جا سکے۔ اِن تکالیف سے بچے کی پڑھائی کو بھی خراب ہونے سے بچایا جا سکتا ہے اور بچے کی ذہنی صحت کی نارمل گروتھ  کے لئے بھی اِن سے بچاوٴ بہت ضروری ہے۔   

اگر ہم بچے کو ہر وقت عینک لگانا شروع کر دیں تو اُس کی نظر تو بہت جلد بہت زیادہ کمزور ہو جائے گی؛ کیا یہ بہتر نہیں کہ بچہ کبھی کبھی لگا لیا کرے مثلاً پڑھتے وقت؟ 

یہ ایک بڑی عام غلط فہمی ہے کہ عینک کو استعمال کرنے سے نظر مزید کمزور ہو جاتی ہے اور تیزی سے کمزور ہو جاتی ہے۔ دوسری غلط فہمی یہ ہے کہ عینک یا تو قریب کا کام کرنے کے لئے ہوتی ہے یا دُور دیکھنے کے لئے۔ حقیقت یہ ہے کہ عینک استعمال کرنے سے نہ تو نظر کی کمزوری ختم ہوتی ہے اور نہ ہی زیادہ ہوتی ہے۔

  • اصل بات صرف اتنی ہے کہ جن کی نظر کی کمزوری ہلکی مقدار میں ہوتی ہے وہ لاشعوری طور پر زور لگا کر عینک کے بغیر بھی دیکھ سکتے ہیں اگرچہ اِس سے اُن کو تکلیف ہوتی ہے۔ لیکن جب عینک کے استعمال سے آنکھیں نارمل ہو جاتی ہیں تو تکلیف تو ٹھیک ہو جاتی ہے لیکن اب آسانی سے عینک کے بغیر فوکس نہیں کر پاتیں جس سے وہ سمجھتے ہیں کہ اب اُن کی نظر پہلے سے زیادہ کمزور ہو گئی ہے۔
  • دوسری اہم بات یہ ہے کہ بچوں کی عینک خواہ وہ منفی نمبر کی ہو خواہ مثبت نمبر کی اُس کو ہر وقت لگانا ضروری ہوتا ہے۔ بچوں کی عینک صرف دور کے لئے یا صرف نزدیک کے لئے نہیں ہوتی بلکہ ہر وقت استعمال کے لئے ہوتی ہے۔ اگر ہر وقت استعمال نہ کیا جائے تو آنکھوں کو مطلوبہ ریسٹ میسر نہیں آتا جس سے مطلوبہ فوائد حاصل نہیں ہتے۔ 

ہمارا بچہ تو عینک کے بغیر بھی پڑھ لیتا ہے ہم کیوں بچے کو عینک کی مصیبت میں ڈالیں؟

جیسا کہ اوپر عرض کیا گیا ہے کہ ہلکے منفی نمبر کی عینک، مثبت نمبر کی عینک، اور سلنڈر نمبر کی عینک کی صورت میں یہ دھوکہ ہوتا ہے کہ چونکہ عینک کے بغیر بھی زیادہ تر کام چل جاتا ہے اِس لئے مریض اور مریض کے لواحقین اِس بات پر قائل نہیں ہو پاتے کہ عینک اُن کے لئے ضروری ہے۔ حالانکہ 

پہلی بات تو یہ ہے کہ اگر عینک استعمال نہ کریں گے تو تکالیف ختم نہیں ہوںگی۔ کبھی کبھار استعمال کرنے سے کبھی آرام آ جائے گا اور کبھی تکلیف شروع ہو جائے گی۔

دوسری انتہائی بات یہ کہ عینک بعض انتہائی خطرناک مسائل سے بچاوٴ کے لئے تجویز کی جاتی ہے۔ اگر عینک باقاعدگی سے استعمال نہیں کی جائے گی تو اُن تکالیف سے بچاوٴ ناممکن ہو جائے گا۔ بجائے اِس کے کہ وہ تکالیف آجائیں اور پھر اُن کا علاج کیا جائے اِس سے بہتر ہے کہ اُن کو آنے سے روکا جائے جس کا واحد طریقہ عینک کا صحیح طریقے سے استعمال کرنا ہے۔  

کیا یہ حقیقت نہیں آجکل بچوں میں نظر کی کمزوری زیادہ ہو گئی ہے پہلے تو اتنے زیادہ بچوں کی نظر کمزور نہیں ہوا کرتی تھی؟

اصل میں بچوں میں نظر کی کمزوری کا تناسب زیادہ نہیں ہوا بلکہ لوگوں میں بیماریوں کے بارے میں شعور میں اضافہ ہوا ہے۔ علاوہ ازیں تعلیم کے تناسب میں اضافہ ہوا ہے جس سے تشخیص کا تناسب بہتر ہو گیا ہے۔ پہلے بےشمار بچوں کے بارے میں پتہ ہی نہیں چلتا تھا کہ ان کی نظر کمزور ہے۔

کسی کو مثبت نمبر کی عینک لگتی ، کسی کو منفی نمبر کی، جبکہ کئی لو گوں کو کسی خا ص زاویے پر نمبر لگتا ہے اِس کا کیا مطلب ہے؟

اِس بات کا تعلق اِس بات سے ہے کہ آنکھ مہں نقص کونسا ہے؟ جس کی آنکھ سٹینڈرڈ سا ئز سے چھوٹی ہو اس کو مثبت نمبر کی عینک لگانے سے اور جس کی آنکھ بڑی ہو اس کو منفی نمبر کی عینک لگانے سے صاف نظر آنے لگتا ہے۔ جن کے قرنیہ کی اُفقی اور عمودی گولائی میں فرق ہو تا ہے اُن کو کسی خا ص زاویے پر نمبر لگانے سے [جسے سلنڈر نمبر کہتے ہیں] صاف نظر آتا ہے۔ 

Myopia  یا قریب نظری

نظر کی کمزوری کی یہ وہ قسم ہے جس میں آنکھ کے کُرّے کا سائز نارمل کی نسبت لمبا ہوتا ہے۔ جس سے آنکھ کا فوکس کرنے کا نظام شبیہ پردہ بصارت پر نہیں بنا پاتا۔ اِس کی وجہ سے دور کی چیزیں دھندلی نظر آتی ہیں۔ اِن مریضوں کو منفی نمبر کی عینک لگتی ہے۔ اِس نقص کو سمجھنے کے لئے ذیل کی تصویر ملاحظہ کریں: 

اِسی بات کو اِس تصویر میں دیکھیں کہ فوکس کرنے کا نظام درخت کی تصویر کو پردے پر بنانے کی بجائے آنکھ اندر کہیں بنا رہا ہے اور جو شبیہ پردے پر جاکر بن رہی ہے وہ دھندلی ہے، ظاہر اِس کا تو فائدہ نہیں ہوتا کیونکہ جب تک تصویر پردے کے اوپر نہیں بنے گی دماغ کو نظر نہیں آئے گی۔  

عینک اور کنٹیکٹ لینز کی مدد سے شعاعوں کو پھیلا کر پیچھے لے جایا جاتا ہے جس سے واضح اور صاف شبیہ پردے کے اوپر بنا شروع ہو جاتی ہے اور آدمی کو نظر آنا شروع ہو جاتا ہے اور جونہی عینک کو اُتارا جاتا ہے نظر پھر دھندلی ہو جاتی ہے۔ یہ چیز آپ نیچے دیکھ سکتے ہیں:

اِس نقص کے مریض عموماً نزدیک دیکھنے میں مشکل محسوس نہیں کرتے لیکن دور کی چیزوں کو نہیں دیکھ سکتے۔ جن لوگوں کی نظر تھوڑی کمزور ہوتی ہے وہ زور لگا کر دیکھ لیتے ہیں لیکن پھر سر درد اور آنکھوں کی تکالیف میں مبتلا ہو جاتے ہیں۔  

Hypermetropia یا بعیدنظری

نظر کی کمزوری کی یہ وہ قسم ہے جس میں آنکھ کے کُرّے کا سائز نارمل کی نسبت چھوٹا ہوتا ہے۔ جس سے آنکھ کا فوکس کرنے کا نظام شبیہ پردہ بصارت پر نہیں بنا پاتا۔ اِن مریضوں کو مثبت نمبر کی عینک لگتی ہے۔ اِس کی وجہ سے دور اور نزدیک تمام چیزیں دھندلی نظر آتی ہیں۔ تاہم دھندلاپن نزدیک کی چیزوں کو دیکھتے ہوئے زیادہ محسوس ہوتا ہے جیسا کہ اِس تصویر میں دور کا منظر تو کافی حد تک صاف ہے لیکن قریب کا چہرہ صاف نظر نہیں آ رہا:

 

اِس نقص کو سمجھنے کے لئے ذیل کی تصویر ملاحظہ کریں: 

اِسی بات کو اِس تصویر میں دیکھیں کہ فوکس کرنے کا نظام چارٹ کی تصویر کو پردے پر بنانے کی بجائے آنکھ کے پیچھے ایک خیالی جگہ پر بنا رہا ہے اور جو شبیہ پردے پر جاکر بن رہی ہے وہ دھندلی ہے، ظاہر اِس کا تو فائدہ نہیں ہوتا کیونکہ جب تک تصویر پردے کے اوپر نہیں بنے گی دماغ کو نظر نہیں آئے گی۔  

عینک اور کنٹیکٹ لینز کی مدد سے شعاعوں کو پھیلا کر پیچھے لے جایا جاتا ہے جس سے واضح اور صاف شبیہ پردے کے اوپر بنا شروع ہو جاتی ہے اور آدمی کو نظر آنا شروع ہو جاتا ہے اور جونہی عینک کو اُتارا جاتا ہے نظر پھر دھندلی ہو جاتی ہے۔ یہ چیز آپ نیچے دیکھ سکتے ہیں: 

Astigmatism یا چندھیا پن

یہ نظر کی کمزوری کی وہ کیفیّت ہے جس میں قرنیہ کی سطح غیر ہموار ہوتی ہے بالخصوص اُفقی اور عمودی سطحوں کی گولائی ایک جیسی نہیں ہوتی۔ جیسے درج ذیل تصویرمیں نظر آ رہا ہے:

جس کے باعث آنکھ کے پردے پر شعاعیں ایک جگہ پر فوکس ہونے کی بجائے دو یا زیادہ مقامات پر مرتکز ہوتی ہیں۔ چنانچہ جس چیز کو آدمی دیکھتا ہے اُس کی شبیہ واضح نہیں بنتی، یا اُس کی شکل بگڑی ہوئی ہوتی ہے۔ نظر کی یہ کمزوری دور کرنے کے لئے سلنڈر شیشے عینک میں لگائے جاتے جن کا مخصوص زاویے پر فٹ ہونا بہت ایہم ہوتا ہے۔ اِس نقص کی وجہ سے نزدیک اور دور دونوں جگہ پر دھندلاپن ہوتا ہے۔ سلنڈر شیشے مثبت بھی ہو سکتے ہیں اور منفی بھی۔ نیچے کی تصاویر پر غور کریں بعض چیزیں دُھندلائی ہوئیں نظر آتی ہیں تو نظر چیک کرنے والے چارٹ کی شکل ہی بگڑ گئی ہے:

زیادہ نقص والے مریض کو دیکھ ہی پہچانا جا سکتا ہے کہ اِس کی آنکھ میں سٹگماٹزم ہے جیسا کہ اِس مریض کی تصویر کو دیکھ کر ہی پتہ چل رہا ہے کہ یہ فوکس کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔ اس طرح کی شکلوں کے باعث اس مرض کو چندھیاپن کہتے ہیں:

 

پردہ بصارت پر شعاعیں کیسے فوکس ہوتیں ہیں دیکھئے:

ذرا سادہ انداز میں سمجھنے کے لئے اِس تصویر پر غور فرمائیں:

عمودی سطح کو سُرخ دکھایا گیا ہے جبکہ اُفقی سطح کو نیلے رنگ میں دکھایا گیا ہے۔ دونوں سطحوں کی گولائی میں بڑا واضح فرق دکھائی دے رہا ہے۔ نیلے رنگ سے ظاہر ہو رہا ہے کہ شعاعوں کو ضرورت سے زیادہ قریب فوکس کر دیا گیا ہے جبکہ سُرخ رنگ کی سطح کی گولائی تھوڑی ہونے کے باعث وہ شعاعوں کو پردے پر فوکس کرنے میں ناکام ہے۔ اِس طرح عملاً دو تصویریں بن رہی ہیں جیسا کہ نیچے والی تصویر میں نظر آ رہا ہے:

اِن دو یا زیادہ بننے والی تصاویر کو باہم ضم کرنے کی کوشش کرنے کے لئے آنکھیں زور لگاتی ہیں، جس سے آنکھوں کی خاص شکل بنتی ہے اور جس سے سردرد اور دیگر تکالیف پیدا ہوتی ہیں۔

کیا عینک با قا ئدگی سے اِستعمال کر نے سے نمبر ایک جگہ رُک جاتا ہے یا پھر بھی بڑھتا رہتا ہے؟

عینک چونکہ بیما ری کی وجہ دُور نہیں کر تی بلکہ صرف علا متوں کا علا ج کر تی ہے اِس لئے یہ غلط مشہور ہو گیا ہے کہ عینک باقائدگی سے اِستعمال کر نے سے نمبر ایک جگہ رُک جاتا ہے ۔  

  • · آنکھ کی ساخت میں عموماً 18 سال کی عمر تک تبدیلیاں آتی رہتی ہیں کئی بچوں کی آنکھوں کی گروتھ بیس، اکیس، یا بعض بچوں کی گروتھ چوبیس سال کی عمر میں بھی رُکتی ہے۔ چنانچہ جب تک گروتھ ہوتی رہتی ہے اس وقت تک عینک کا نمبر بدلتا رہتا ہے خواہ عینک جتنی مر ضی با قا ئدگی سے اِستعمال کریں۔ جب آنکھوں کی گروتھ  رُک جاتی ہے اُس وقت عینک کا نمبر بھی ایک جگہ پر رُک جاتا ہے۔ عینک لگانے یا نہ لگانے سے اس کا کوئی تعلق نہیں ہے۔  

  • چونکہ بچپن کے دوران یہ عمل مسلسل جاری رہتا ہے اس لئے عینک کا نمبر بھی بدلتا رہتا ہے۔ اسی لئے بچوں کی عینک کا نمبر وقتاً فوقتاً چیک ہوتا رہنا چاہیے تاکہ ساخت میں جتنی جتنی تبدیلی آتی جائے اُتنا اُتنا عینک کا نمبر بھی تبدیل کیا جاتا رہے۔

  • اِسی طرح چالیس سال کی عمر کے بعد پھر سے عموماً جسم میں تبد یلیاں آنی شروع ہو جا تی ہیں جیسے با ل سفید ہونا شروع ہو جاتے ہیں اِسی طرح اِس عمر کے بعد ایک دفعہ نظر میں تبدیلیاں آنے لگتی ہیں؛ یا اگر پہلے عینک نہیں لگتی تھی اب ضرورت پڑ سکتی ہے، پہلے والی عینک کا نمبر بدلنا شروع ہو جاتا ہے، یا پھر دور اور نزدیک کا نمبر مختلف ہو جاتا ہے۔ اس سے پہلے ایک ہی عینک سے سارے کام ہو جاتے تھے اب نہیں ہوتے۔

وہ کونسے مسائل ہیں جو عینک باقائدگی سے استعمال نہ کرنے سے سامنے آتے ہیں؟

عینک باقاعدگی سے اِستعمال نہ کرنے سے بہت سے مسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے جن سے عینک کے صحیح استعمال کے ذریعے بآسانی نجات حاصل لی جا سکتی ہے۔ چند مسائل ذیل میں درج کیے جا رہے ہیں:

  • ٹی وی دیکھتے ہوئے، ڈرائیونگ کرتے ہوئے، یا پڑھتے ہوئے صاف نظر نہیں آتا؛ اور چونکہ صاف نظر آئے بغیر کام نہیں چل سکتا اِس لئے آنکھوں کو غور کرنا اور زور لگانا پڑتا ہے۔ جس سے آنکھیں بھاری بھاری محسوس ہوتی ہیں، تھک جاتی ہیں، سُرخ ہونے لگتی ہیں، اور الفاظ پر توجہ مرکوز رکھنا مشکل ہو جاتا ہے۔ 

  • بچوں کی پڑھائی اور دیگر کارکردگی متاثر ہوتی ہے۔ نفسیاتی مسائل پیدا ہوتے ہیں سردرد ہوتی ہے جو بچوں میں بعض اوقات اتنی شدید ہوتی ہے کہ ساتھ اُلٹیاں بھی انے لگتی ہیں۔

  • کام کی کارکردگی متاثر ہوتی ہے۔ بہت سے لوگ ایسے کام چھوڑ دیتے ہیں جن پر نظر لگانی پڑتی ہے اور یہ کہتے دکھائی دیتے ہیں کہ “بس جی اب ہم بوڑھے ہو گئے ہیں”۔ حالانکہ اِس بڑھاپے پر بآسانی قابو پیایا جا سکتا ہے۔  

  • اگر کسی بچے کی ایک آنکھ کی نظر دوسری آنکھ کی نسبت کافی زیادہ کمزور ہو تو زیادہ کمزور آنکھ کی نشوونما ناقص رہ جاتی ہے۔ کیونکہ اُس آنکھ سے حاصل ہونے والی معلومات کی دماغ توجیہ نہیں کر پاتا اور بالآخر دماغ کے اُس حصّے کی بھی نشوونما ناقص رہ جاتی ہے اس کیفیت کا نام Amblyopia  ہے۔ اگر چھوٹی عمر میں اس تکلیف کا پتہ چل جا ئے تو تقریباً سو فیصد علاج ممکن ہوتا ہے لیکن بعد میں اس کا علاج نا ممکن ہو جاتا ہے۔ اور یہ آنکھ مستقل طور پر نابینا ہو جاتی ہے۔ پھر کسی دوائی یا اپریشن سے بھی اس کا علاج ممکن نہیں رہتا۔ پہلے تو بارہ سال کی عمر کو اِس کی حد قرار دیا جاتا تھا لیکن اب اِس میں کافی اختلاف ہے۔ زیادہ تر تحقیقات آٹھ یا نو سال کی حد مقرر کر رہی ہیں۔  

  • بہت سارے بچوں میں آنکھوں کے ٹیڑھا پن کی وجہ نظر کی کمزوری ہوتی ہے۔ 

    • جس انکھ میں یہ نقص ہوتا ہے بہت سارے لوگوں میں وہ آنکھ ٹیڑھی [بھینگی] ہو جاتی ہے۔ یہ نقص بچپن میں بھی سامنے آ سکتا ہے بڑی عمر میں بھی۔

    • اِس کے علاوہ جن بچوں کی نظر زیادہ کمزور ہو وہ اگر عینک استعمال نہ کریں تو اُن کی آنکھوں میں ٹیڑھا پن آنے کا امکان بہت زیادہ ہوتا ہے۔ خصوصاً جو آنکھ زیادہ کمزور ہو وہ ٹیڑھی ہونا شروع ہو جاتی ہے۔ 

  • کئی لوگوں میں نفسیاتی مسائل بھی پیدا ہو جاتے ہیں۔  

  • نظر کی کمزوری کی وجہ سے سردرد بہت عام تکلیف ہے۔  

عینک کب اِستعمال کر نی چا ہئے؟ نزدیک کا کام کر تے ہو ئے یا دُور کا کام کر تے ہو ئے؟

یہ بھی ایک بڑی عام غلط فہمی ہے؛ لوگ سمجھتے ہیں کہ عینک یا تو دور کے کام کے لئے ہوتی ہے یا نزدیک کا کام کرنے کے لئے۔ حالانکہ مریضوں کی اکثریت کو جو عینک لگتی ہے وہ ہر وقت لگانے کے لئے ہوتی ہے۔ دور کے لئے بھی ضروری ہوتی ہے اور نزدیک کے لئے بھی۔ اگر اِس طرح استعمال نہ کیا جائے تو عینک کا عملاً کوئی فائدہ ہی نہیں ہوتا۔ خاص طور پر چالیس سال کی عمر سے پہلے تو سب کے لئے ضروری ہوتا ہے کہ ہر وقت عینک استعمال کریں تاکہ آنکھوں پر جو بوجھ پڑتا ہے اُس سے بچا جا سکے۔ چنانچہ یہ یاد رکھنا چاہئے کہ 

  • چا لیس سال کی عمر سے پہلے جو بھی نمبر لگے ﴿خواہ مثبت ،منفی، یا سلنڈر﴾ وہ ہر وقت اِستعما ل کرنا ضروری ہوتا ہے۔

  • چا لیس سال کی عمر کے بعد دُور اور نزدیک کے نمبر مختلف ہو جاتے ہیں اُس وقت ممکن ہے صرف دُور کے لئے ضرورت ہو یا صرف نزدیک کے لئے۔

اگر دور اور نزدیک کے لئے علیحدہ علیحدہ نمبر تجویز کیے گئے ہوں تو اِس صورت میں دُور اور نزدیک کی عینک اکٹھی بنوانی چا ہئے یا علیحدہ علیحدہ؟

اِس کا فیصلہ عموماً اتنا آسان نہیں ہوتا۔ اِس کی وجہ یہ ہے کہ مختلف عوامل کو دیکھتے ہوئے ہی فیصلہ کیا جا سکتا ہے۔ جن میں سے چند درجِ ذیل ہیں: 

  • زیادہ عمر کے لوگوں کی ضرورت عموماً بہت زیادہ باریکی کے کاموں کی نہیں ہوتی۔ اور اُن کی زندگی بھی شدید مصروفیات والی نہیں ہوتی، پھر عموماً اُن کی عینکوں کے نمبر اکثر بڑے ہوتے ہیں اِس لئے وہ بھی علیحدہ علیحدہ عینکوں کو ترجیح دیتے ہیں اور ڈاکٹر بھی اِسی کی ترغیب دیتے ہیں۔
  • کم پڑھے ہوئے لوگوں کی ضروریات بھی عموماً ایسی ہوتی ہیں کہ وہ بھی زیادہ تر علیحدہ علیحدہ عینکیں بنانے کو ترجیح دیتے ہیں۔
  • جو لوگ زیادہ تر وقت قریب کے کام میں مصروف رہتے ہیں اُن کے لئے بھی ڈبل شیشوں والی عینک زیادہ آرام دہ نہیں ثابت ہوتی۔ وہ علیحدہ علیحدہ عینکیں بنوانے کو ترجیح دیتے ہیں۔ 
  • منفی نمبر کے عدسوں والی عینک والے لوگ عموماً نزدیک کے کام میں عینک کی ضرورت محسوس نہیں کرتے اِس لئے وہ بھی علیحدہ عینک بنانے کو ترجیح دیتے ہیں۔ جن لوگوں کو مثبت نمبر کی عینک لگتی ہے اُن کا نمبر اگر بہت زیادہ نہ ہو تو اکٹھی عینک بنانے میں سہولت محسوس کرتے ہیں۔ اگر عینک کا نمبر کافی زیادہ ہو تو پھر اکٹھی عینک تنگ کرتی ہے اس لئے علیحدہ علیحدہ عینکیں ہی اُن کے لئے بہتر رہتی ہیں۔ 
  • وہ پڑھے لکھے لوگ جنھیں اکثر کمپیوٹر پر مصروف رہنا ہوتا ہے۔ یا جنھیں لیکچرز دینے یا سننے جیسی مشغولیت ہوتی ہے ایسے لوگوں کے لئے ملٹی فوکل عدسے بہترین ثابت ہوتے ہیں۔ 

عینک کا نمبر اگر بہت زیادہ نہ ہو تو اکثر لوگوں کے لئے اکٹھی عینک ہی زیادہ بہتر ہو تی ہے۔ تاہم یہ ذہن میں رکھنا ضروری ہے کہ اِس کے کچھ اپنے مسائل بھی ہوتے ہیں جن کے ساتھ زندہ رہنا سیکھنا پڑتا ہے۔ 

دور و نزدیک اکٹھی عینکیں مختلف قسم کی مارکیٹ میں دستیاب ہیں اُن میں سب سے اچھی کون سی قسم ہے؟

مختلف فاصلوں پر کام کرنے والی عینک تین قسم کی ہوتی ہے:

  • با ئیفوکل

  • ٹرائیفوکل 

  • ملٹی فوکل  

عینک کے بائیفوکل Bifocal شیشے

یہ عینک میں لگائے جانے والے وہ عدسات ہیں جن کے دو حصّے ہوتے ہیں ایک حصّے کو عام سرگرمیاں انجام دیتے ہوئے استعمال کیا جاتا ہے جبکہ دوسرے حصّے میں سے دیکھ کر نزدیک کے کام کیے جاتے ہیں۔ اِن عدسات کو بہت سے لوگ پسند کرتے ہیں اگرچہ بہت سے اِن سے مطمئن نہیں ہوتے۔ کیونکہ اُن کو اِن کو استعمال کرتے ہوئے دقّت محسوس ہوتی ہے۔ نیچے تصویر میں اِسی قسم کی عینکیں نظر آ رہی ہیں۔

 

عینک کے ٹرائی فوکل Trifocal شیشے

یہ عینک میں لگائے جانے والے وہ عدسات ہیں جن کے تین حصّے ہوتے ہیں ایک حصّے کو عام سرگرمیاں انجام دیتے ہوئے استعمال کیا جاتا ہے دوسرے حصّے کو کمپیوٹر پر کام کرنے یا اِسی طرح کے درمیانے فاصلے پر ہونے والے کام کیے جاتے ہیں جبکہ تیسرے حصّے میں سے دیکھ کر نزدیک کے کام کیے جاتے ہیں۔ اِن عدسات کو زیادہ لوگ پسند نہیں کرتے کیونکہ اِن کو استعمال کرتے ہوئے کافی دقّت محسوس ہوتی ہے اور اِن سے فائدہ اُٹھانے کے لئے کافی پریکٹس کی ضرورت ہوتی ہے۔ نیچے تصویر میں اِسی قسم کی عینک نظر آ رہی ہے۔

عینک کے ملٹی فوکل Multifocal شیشے

یہ عینک میں لگائے جانے والے وہ عدسات ہیں جن کے کئی حصّے ہوتے ہیں سب سے اوپر والے حصّے کو عام سرگرمیاں انجام دیتے ہوئے استعمال کیا جاتا ہے درمیان والے حصّے کو کمپیوٹر پر کام کرنے یا اِسی طرح کے درمیانے فاصلے پر ہونے والے کام کیے جاتے ہیں۔ اِس حصّے کی یہ خصوصیّت ہوتی ہے کہ اِس میں نمبر بتدریج بدلتا ہے اور مختلف فاصلوں پر دیکھنے کیلئے مختلف نمبر میسّر آ جاتے ہیں۔ جبکہ تیسرے حصّے میں سے دیکھ کر نزدیک کے کام کیے جاتے ہیں۔ درمیانے حصّے کے دونوں طرف کچھ ایریا ایسا ہوتا ہے جس میں کوئی نمبر نہیں ہوتا۔ یہ حصّے اکثر لوگوں کے لئے تکلیف کا باعث بنتے ہیں۔ اِن عدسات کو بہت زیادہ لوگ پسند کرتے ہیں کیونکہ اِن کو استعمال کرتے ہوئے کافی آسانی ہوتی ہے اگرچہ اِن سے فائدہ اُٹھانے کے لئے کافی پریکٹس کی ضرورت ہوتی ہے۔ لیکن پڑھے لکھے لوگوں اِس کی وجہ سے بار بار عینکیں بدلنے کی کوفت سے نجات مل جاتی ہے۔ نیچے تصویر میں اِس قسم کی عدسوں کے مختلف حصوں کی تقسیمِ کار دکھائی گئی ہے:

اور نیچے والی تصاویر میں دکھایا گیا ہے کہ اِن شیشوں میں سے کیسے نظر آتا ہے یا اِن کے مختلف حصّے کیسے کام کرتے ہیں۔

اب تک جو عینکیں مارکیٹ میں میسّر ہیں اُن میں یہ سب سے اچھی قسم کے شیشے ہیں۔ اِن کے ذریعے بہت حد تک ساری سرگرمیاں ایک ہی عینک سے انجام دی جا سکتی ہیں۔ خاص طور پر یہ اُن لوگوں کے لئے بہت موزوں ہیں جن کو کئی کمپیوٹر پہ کام کرنا ہوتا ہے، کبھی کتاب پڑھنی یا کسی رجسٹر پہ لکھنے یا پڑھنے کا کام کرنا پڑتا ہے، کبھی پروجیکٹر پہ کوئی پریزینٹیشن دیکھنی ہوتی ہے اور ڈرائیونگ کرنی ہوتی ہے۔    

نظر کی کمزوری کا کیا عینک کے علاوہ بھی کو ئی علاج ہے؟

  • اگر تو آپ کے ذہن میں کوئی دوائی ہے یا ورزیشیں ہیں تو تلخ حقیقت یہ کہ نہیں۔ ابھی تک بہت تحقیقات کے باوجود ایسا کوئی ذریعہ علاج دریافت نہیں ہو سکا۔ 

  • بہت ہی کم تعداد میں بعض ایسے لوگ ہوتے ہیں جن کی بینا ئی کسی وقتی وجہ سے کم ہو ئی ہو تی ہے یا نظر کی کمزوری کی کوئی ایسی وجہ ہوتی ہے جو قابلِ علاج ہوتی ہے مثلاً شوگر کے نا منا سب علاج کے با عث نظر کا کم ہو جان، کا لا مو تیا کے با عث نظر کا متاثر ہو جانا،قر نیہ میں سو جھن کے باعث خصوصاً Limbal conjuctivitis [یہ الرجی کی ایک قسم ہے] کے باعث۔ ایسے لوگوں کو یقیناً دوا ئی سے فا ئدہ ہو تا ہے۔

  • میری پریکٹس اس وقت تیسرے عشرے میں ہے اس طویل عرصے کے دوران مجھے کو ئی ایسا شخص نہیں ملا جس کی عینک وا قعی کسی ہو میو پیتھک یا کسی اور نسخے سے اُتر گئی ہو۔ کئی لوگ آئے ہیں کہ میں نے علاج کروایا ہے دیکھیں کتنا فرق پڑا ہے؟ جب چیک کیا ہے تو جتنا نمبر پہلے لگتا تھا اُتنا ہی لگ رہا ہو تا البتّہ علا ما ت ضرور دب چکی ہو تی ہیں۔

  • عینک یا کنٹیکٹ لینز کے علاوہ اِس مسئلے کا علاج صرف اور صرف آنکھ کی سا خت میں تبد یلی لا نے سے ممکن ہے جو کئی طر یقوں سے ممکن ہے مثلاً

    • لیزر لگا نے سے،

    • فیکو اپریشن سے،

    • Phakic IOL سے،

    • قرنیہ کے اندر فٹ ہونے والے Corneal rings سے۔

تاہم حقیقت یہی ہے کہ سب سے زیا دہ اِستعمال ہو نے والا اور سب سے زیادہ موثر اور آزمودہ طریقہ لیزر ہی ہے.

لیزر اپریشن میں آنکھ کے اندر کیا تبدیلی لائی جاتی ہے؟

چونکہ قرنیہ کی گولا ئی کو تبدیل کرنے سے اُس کی روشنی کو فوکس کرنے کی طاقت تبدیل کی جا سکتی ہے اِس لئے لیزر کے ذریعے قرنیہ کی بیرونی سطح کی گولائی کو تبدیل کیا جاتا ہے۔ عینک کے نمبر کے حساب سے کِسی حصے کو زیادہ گول کر دیا جاتا ہے اور کسی حصےکی گولائی کو کم کر دیا جاتا ہے۔ اِس تبدیلی سے مختلف چیزوں سے منعکس ہو کر آنے والی روشنی آنکھ کے پردے پر صحیح طرح فوکس ہو نے لگتی ہے اور آنکھ کو بغیر کسی سہارے [یعنی عینک یا کنٹیکٹ لینز وغیرہ] کے صاف نظر آنا شروع ہو جاتا ہے۔ درج زیل تصاویر میں اس اپریشن کے طریق کار کو سمجھانے کی کو شش کی گئی ہے۔ 

لیزر علاج کے کیا نقصانات ہو سکتے ہیں؟ اور کیا کرنا ہوتا ہے؟

صحت مند آنکھ میں یہ علاج بہت مفید ہوتاہے خصوصاً تھوڑے نمبروں تک تو علاج کے نتائج بہترین ہیں، البتّہ بہت زیادہ نمبر ہو مثلاً سولہ سترہ نمبر تو پھر لیزر کی بجائے متبادل طریقوں کو اختیار کرنا چاہئے۔۔ البتہ اگر کسی کی آنکھوں میں کوئی پہلے سے ایسی بیماری ہو جو مستقل طور پر صحیح نہ ہو سکتی ہو تو پھر ضرور نقصانات ہو سکتے ہیں مثلاً

  • قرنیہ کی کوئی پرانی بیماری خصوصاً قرنیہ مخروطیہ یعنی Keratoconus اس کیفیّت میں قرنیہ کا مرکزی حصّہ پتلا ہو چکا ہوتا ہے چنانچہ لیزر لگانے سے مزید پتلا ہو سکتا ہے جس سے بیماری مزید بگڑ سکتی ہے۔ 

  • قرنیہ میں اگر مسلسل سوزش رہتی ہو۔

  • Corneal opacity یعنی قرنیہ کے اندر داغ جس سے قرنیہ کی شفّافیّت متاثر ہو جاتی ہے اور فوکس کا نقص ٹھیک ہو جانے کے باوجُود نظر مکمل ٹھیک نہیں ہو پاتی۔

حقیقت ہے کہ یہ علاج بہت سادہ اور محفوظ ہے مہنگا اِس لئے نہیں کہ خطرناک ہے بلکہ اس لئے ہے کہ اس کی مشینیں اور دیگر لوازمات بہت مہینگے ہیں علاوہ ازیں اس ٹیکنیک کے ما ہرین کم ہیں خصوصاً Epi-LASIK کے۔ 

لیزر اپریشن سے پہلے کیا کرنا ہوتا ہے؟ کتنا وقت پہلے تیاری کے لئے چاہئے ہوتا ہے؟ کیا پہلے معائنہ ضروری ہوتا ہے؟

  • اس کے لئے کیا چا ہئے؟ 18 سے 40 سال عمر ہونی چاہئے، ارادہ کر لیں، اپنی ترجیحات میں اس کو اوّلین اہمیت دیں۔

  • ایک دفعہ تفصیلی معائنہ ہونا چاہئے تاکہ ممکنہ نقصانات یا Risk factors کا پتہ چلایا جا سکے۔ اور کسی چیز کا پہلے سے علاج ضروری ہو تو کیا جا سکے۔

  • علاج سے پہلے بہتر ہوتا ہے کہ تین دن تک Antibiotic قطرے استعمال کئے جائیں تاکہ بعد از اپریشن انفیکشن کا سدّباب کیا جا سکے۔

  • اپریشن کا وقت آدھے گھنٹے کے قریب ہوتا ہے- جس کے دوران مریض کو کوئی تکلیف نہیں ہوتی بلکہ وُہ ڈاکٹر سے باتیں کرتا رہتا ہے، سُن کرنے والے قطرے ڈالے جاتے ہیں کوئی انجیکشن وغیرہ استعمال نہیں کیا جاتا۔

  • اپریشن کے فوری بعد کُچھ نہ کُچھ تکلیف بہرحال محسُوس ہوتی ہے جو دوسرے دن عموماً ختم ہو جاتی ہے۔ آنکھوں میں جلن اور چبھن محسوس ہوتی ہے۔ پانی آتا ہے اور کئی لوگوں سے روشنی برداشت نہیں ہوتی۔

  • اپریشن کے بعد پہلے کُچھ نہ کُچھ دُھندلا نظر آتا ہے خصوصاً اُن لوگوں کو جن کا نمبر کافی زیادہ ہو۔ دوسرے دن عموماً دُھندلاپن نہ ہونے کے برابر ہوتا ہے۔

  • نظر کی بہتری بہت حد تک ابتدائی چند دنوں میں ہو جاتی تاہم یہ عمل تین ماہ تک جاری رہتا ہے۔ خصوصاً جن کا نمبر زیادہ ہو۔ ایسے لوگوں کو شروع کے دنوں میں قریب دیکھنے میں مشکل پیش آتی ہے جو کہ دراصل قرنیہ میں سوزش کے باعث ہوتی ہے۔ جُوں جُوں سوزش بہتر ہوتی جاتی ہے یہ تکلیف بھی بہتر ہوتی جاتی ہے۔

  • شروع کے دو دن تو کام پہ واپسی مشکل ہوتی ہے اُس کے بعد اپنے کام پہ جایا جا سکتا ہے۔

لیزر اپریشن مختلف نام سننے میں ملتے ہیں ان کا کیا فرق ہے؟

درج ذیل طریقوں سے اپریشن کیا جاتا ہے:

  1. Surface PRK
  2. Epi-Lasik or LASEK
  3. LASIK or Femtosecond LASIK

ان تینوں طریقوں میں بنیادی اپریشن ایک ہی لیزر مشین کے ذریعے کیا جاتا ہے جسے Excimer Laser کہا جاتا ہے۔ اس لیزر کی مدد سے قرنیہ کی گولائی کو تبدیل کیا جاتا ہے۔ ان میں فرق کیا ہوتا ؟ فرق یہ ہوتا ہے:

  1.  پہلی ٹیکنک Surface PRK میں قرنیہ کو چھیل کر اوپر سے گوشت کی ایک تہہ اتار دی جاتی ہے اور پھر نچلی تہوں پر لیزر لگائی جاتی ہے۔
  2. دوسری ٹیکنک Epi-LASIK میں قرنیہ کی اوپر کی تہیں بڑی احتیاط سے مخصوص اوزاروں کی مدد سے  ہٹائی جاتی ہیں اور ان کو بچا کر محفوظ رکھا جاتا ہے اور انہیں Corneal flap کہا جاتا ہے۔ نیچے والی تہوں پرلیزر لگانے کے یہ محفوظ شدہ تہیں دوبارہ اپنی جگہ پر فٹ کر دی جاتی ہیں انہیں ضائع نہیں ہونے دیا جاتا۔
  3.   تیسری ٹیکنک Femtosecond Laser میں قرنیہ کی اوپر کی تہیں ایک دوسری لیزر مشین جسے Femtosecond laser کہا جاتا ہے کی مدد سے ہٹائی جاتی ہیں اور ان کو بچا کر محفوظ رکھا جاتا ہے اور انہیں Corneal flap کہا جاتا ہے۔ نیچے والی تہوں پرلیزر لگانے کے یہ محفوظ شدہ تہیں دوبارہ اپنی جگہ پر فٹ کر دی جاتی ہیں انہیں ضائع نہیں ہونے دیا جاتا۔

آخری دونوں طریقے جدید ترین ہیں۔ ان میں سے ایک میں فلیپ مینوئل طریقے سے بنایا جاتا ہے دوسرے میں لیزر نائف کے ذریعے سے۔ یہ لیزر نائف چونکہ بہت مہنگا ہے اس لئے اس پر اخراجات بھی زیادہ آتے ہیں۔

Phakic IOL  کیا چیز ہے اور یہ اپر یشن کِس قسم کے مر یضوں کا کِیا جا تا ہے؟

یہ بھی ایک لینز ہوتا ہے جسے آپ کنٹیکٹ لینز بھی کہہ سکتے ہیں اور IOL بھی۔ اِسے اپر یشن کر کے آ نکھ کے اندر فِٹ کر دیا جا تا ہے لیکن اس کو فِٹ کر نے کے لئے قدرتی لینز کو نکا لا نہیں جا تا بلکہ اس اپریشن کے بعد مریض کی آنکھ میں دو لینز ہوتے ہیں ایک قدرتی اور دوسرا مصنوعی۔ اس کی دو قسمیں ہیں جو نیچے کی تصویر میں دکھا ئی گئی ہیں۔ یہ لینزاُن لو گو ں کے لئے بہتر ین ہے جِن کا عینک کا نمبر بہت زیادہ ہو تا ہے اور اُن کے لئے لیزر اپر یشن مناسب نہیں ہوتا کیونکہ باعثِ نقصا ن ہو سکتا ہے۔ 

اگرآپ نظر کی کمزوری سے متعلق مزید کوئی سوال میں پوچھنا چاہتے ہوں تو اُس کو کمنٹ کے خانے میں لکھ کر پوسٹ کر دیں۔ اسی طرح اپنی رائے، تبصرہ یا تجویز کو بھی کمنٹ میں لکھ کر پوسٹ کردیں میں بہت ممنون اور مشکور ہوں گا۔

178 thoughts on “Refractive errors نظر کی کمزوری: وجوہات، علاج”

    1. درج ذیل طریقوں سے اپریشن کیا جاتا ہے:

      1. Surface PRK
      2. Epi-Lasik or LASEK
      3. LASIK or Femtosecond LASIK

      ان تینوں طریقوں میں بنیادی اپریشن ایک ہی لیزر مشین کے ذریعے کیا جاتا ہے جسے Excimer Laser کہا جاتا ہے۔ اس لیزر کی مدد سے قرنیہ کی گولائی کو تبدیل کیا جاتا ہے۔ ان میں فرق کیا ہوتا ؟ فرق یہ ہوتا ہے:

      1. پہلی ٹیکنک Surface PRK میں قرنیہ کو چھیل کر اوپر سے گوشت کی ایک تہہ اتار دی جاتی ہے اور پھر نچلی تہوں پر لیزر لگائی جاتی ہے۔
      2. دوسری ٹیکنک Epi-LASIK میں قرنیہ کی اوپر کی تہیں بڑی احتیاط سے مخصوص اوزاروں کی مدد سے ہٹائی جاتی ہیں اور ان کو بچا کر محفوظ رکھا جاتا ہے اور انہیں Corneal flap کہا جاتا ہے۔ نیچے والی تہوں پرلیزر لگانے کے یہ محفوظ شدہ تہیں دوبارہ اپنی جگہ پر فٹ کر دی جاتی ہیں انہیں ضائع نہیں ہونے دیا جاتا۔
      3. تیسری ٹیکنک Femtosecond Laser میں قرنیہ کی اوپر کی تہیں ایک دوسری لیزر مشین جسے Femtosecond laser کہا جاتا ہے کی مدد سے ہٹائی جاتی ہیں اور ان کو بچا کر محفوظ رکھا جاتا ہے اور انہیں Corneal flap کہا جاتا ہے۔ نیچے والی تہوں پرلیزر لگانے کے یہ محفوظ شدہ تہیں دوبارہ اپنی جگہ پر فٹ کر دی جاتی ہیں انہیں ضائع نہیں ہونے دیا جاتا۔

      آخری دونوں طریقے جدید ترین ہیں۔ ان میں سے ایک میں فلیپ مینوئل طریقے سے بنایا جاتا ہے دوسرے میں لیزر نائف کے ذریعے سے۔ یہ لیزر نائف چونکہ بہت مہنگا ہے اس لئے اس پر اخراجات بھی زیادہ آتے ہیں۔

  1. سلام علیکم ڈاکٹر صاحب میری دونوں ٓنکھوں کا نمبر 5.5- ہے کیا اس کا علاج لیزر سے ہو سکتا ہے؟ اور اس پر خرچہ کتنا ہو گا؟

  2. Mere dono anko ka number -1 hai kia es ka elaj lasic سرجری se hoga Or es par kitna kharcha aye ga

    اسلام علیکم ڈاکٹر صاحب میری دونوں ٓنکھوں کا نمبر 1- ہے کیا اس کا علاج لیزر سے ہو سکتا ہے؟ اور اس پر خرچہ کتنا ہو گا؟

    1. وعلیکم السلام جی اس کا علاج ممکن ہے۔ آپ اپنی ٓنکھوں کا پہلے معائنہ کروائیں۔ تین طریقے ہیں PRK، Epi-LASIK ،  اور Femtosecond LASIK سب کا خرچہ مختلف ہے۔ 45,000 روپے سے 1,30,000 روپے تک ہے۔

  3. میری نظر بہت کمزور ہے ایک آنکھ کی نظر 7.30+ ہے اور دوسری آنکھ کی 3.30 + ہے۔ میری آنکھوں میں ہر وقت کھچاؤ رہتا ہے۔ کیا میرا آپریشن ہو سکتا ہے؟

  4. السلام علیکم
    میری عمر 21 سال ہے. میں نے اتفاق ہسپتال لاھور سے نظر چیک کروائی تو انہوں نے عینک تجویز کی تھی۔ تقریبا 2 سال ہوگئے ہیں لیکن جب موبائل یا ٹی وی زیادہ دیکھتا ہوں تو آنکھوں میں جلن اور سر میں شدید درد ہوتا ہے۔ آپکی مہربانی ہوگی کوئی قیمتی مشورہ دے دیں کہ میں کیا کروں۔ جزاک اللہ خیر ❤❤❤

    1. وعلیکم السلام ایسے لگتا کہ آپ کی عینک کا نمبر تبدیل ہو گیا ہے۔ اس کو دوبارہ چیک ہونا چاہئے۔ اس کے علاوہ آپ ان ہدایات کا مطالعہ کریں جو میں نے کمپیوٹر کے استعمال کے دوران کرنے کیلئے اسی ویب سائٹ پر شائع کی ہوئی ہیں۔ اور پھر ان پر عمل کرنے کی کوشش کریں انشاءاللہ آپ کی تکلیف ٹھیک ہو جائے گی۔ مطالعہ کیلئے آپ درج ذیل لنک پر کلک کر سکتے ہیں: http://www.drasifkhokhar.com/computer-and-eyes-کمپیوٹر-اور-آنکھیں/

  5. 80 سال کی عمر میں لینز لگوائے جائیں اور وہ کمزور ہو جائیں تو دوبارہ ٹھیک ہو سکتے ہیں؟

  6. السلام عليكم ورحمة الله وبركاته میرا نمبر7- ہے میں نے بہت علاج کیا پر کوئی فائدہ نہیں ہوا. آپ پلیز رہنمائی فرمائیں. جزاك الله خيرا

    1. محترم سلمان صاحب نظر کی کمزوری دوائیوں سے ٹھیک نہیں ہوتی۔ کیوں ہوتی اور کیسے ٹھیک ہوتی ہے اس کیلئے میرے آرٹیکل کو دوبارہ پڑھیں انشاءاللہ سمجھ آ جائے گی۔

  7. اسلام علیکم ورحمت الله ڈاکٹر صاحب ۔ ۔ ۔میری دور وقریب دونوں نظریں کمزور ہیں۔ عمر تقریبا 45 سال ہےچشمہ بھی ہے آنکھوں میں جلن کی شکایت بھی ہے برائے مہربانی کوئی نسخہ بتادیں۔ عین نوازش ہوگی۔

  8. اسلام علیکم ورحمت الله ڈاکٹر صاحب ۔ ۔ ۔میری دور وقریب دونوں نظریں کمزور ہیں۔ عمر تقریبا 45 سال ہےچشمہ بھی ہے آنکھوں میں جلن کی شکایت بھی ہے برائے مہربانی کوئی نسخہ بتادیں۔ عین نوازش ہوگی۔

  9. اسلام و علیکم ڈاکٹر صاحب ،مجھے کلر بلائنڈنیس کے مسئلے کا سامنا کرنا پڑرہا ھے۔ ڈرائیونگ ٹیسٹ میں کلروژن میں میں فیل ھوگیا۔کلر میں لکھے ھندسےمجھے نظر نہیں آتے ۔کلر میں لکھے ۱۲ کے بعد مجھے کلر والے ہندسے نظر نہیں آتے۔مہربانی فرما کر مجھے اسکا حل بتائیں ؟؟

  10. وعلیکم ڈاکٹر صہاب
    آپ سے عرض ہے ۔ایک بچی کو ٹبی کی بیماری ھوگی اس بعد اس کی انکھوں کی روشنی چلی گی ڈاکٹروں کا کہنا کچھ واقت لگے گا اس کی روشنی واپس آ جاے گی

  11. ڈاکٹر صاحب!میرا بیٹا حفظ قرآن کے بعد میٹرک کا طالب علم ہے۔ اس کی نظربچپن سے کمزور ہے آنکھوں کا توازن بھی خراب ہے۔ ایک آنکھ کی نظر تو کافی کمزور ہے۔ بڑھنے وقت آنھکیں کتاب کے بالکل قریب کرکے پڑھتا ہے۔ بچپن سے علاج کروا رہے ہیں مگر نمبر زیادہ ہوتا گیا اور اب تو ایک آنکھ کا نمبر گیارہ سے بھی زیادہ ہے۔ کیا اس کا علاج ہوسکتا ہے۔

  12. السلام علیکم 8 سال پہلے میری آنکھ میں سفید موتیا آ گیا تھا۔ میرے ابو نے اُس کے پکنے کا انتظار کیا اور سات مہینے بعد آپریشن کروایا آپریشن سے پہلے ہی ڈاکٹر صاحب نے بتایا تھا کہ آنکھ کا پردہ خراب ہو گیا ہے اِس لئے آپریشن کے فوری بعد نظر نہیں آئے گا بلکہ بعد میں کسی بڑے ہسپتال میں پردے کا آپریشن بھی کروانا ہوگا۔ میں نے سفید موتیا کا آپریشن کروا لیا لیکن بعد میں پردے کے آپریشن کے سلسلے میں ہم لوگوں نے سستی کی۔ اب 8 سال بعد جب چیک کروایا ہے تو ڈاکٹر صاحب نے کہا ہے کہ اب کچھ نہیں ہو سکتا۔ اب میں اِس آنکھ سے کبھی نہیں دیکھ سکوں گی۔ میری آنکھ ٹیڑھی بھی ہو چکی ہے۔ پلیز اگر ابھی کچھ ہو سکتا ہے تو میری رہنمائی فرمائیں۔ میں بہت زیادہ اخراجات برداشت نہیں کر سکتی۔

    1. السلام بیٹا آپ کی عمر اب کتنی ہے؟ کیا آپ کو کوئی اور بیماری مثلاﹰ دمہ، شوگر وغیرہ ہے؟ لگتا تو ایسے ہے کہ اب اُس آنکھ میں amblyopia کی بیماری پیدا ہو گئی ہے جس علاج 11 سال کی عمر کے بعد ممکن نہیں ہو سکتا۔ البتہ ٹیڑھاپن ٹھیک کیا جا سکتا ہے۔

      1. میری عمر 26 سال ہے اور مجھے بالکل کوئی اور بیماری نہیں ہے اور میں صحت مند ہوں۔ میری دوسری آنکھ کی نظر بھی بہت کمزور ہے۔ اُس کا نمبر منفی 12 ہے۔ آپ مجھے یہ بھی بتائیں کہ کیا میں اُس کی لیزر کروا سکتی ہوں؟

  13. سر میری وائف کی نظر بہت کم ہے ۔6 نمبر عینک لگتی ہے اسکی عمر 21 سال ہے ابھی وہ عینک سے چھٹکارا پانا چاہتی یے پلیز کوئی علاج بتائیں مہر بانی ہو گی
    ارشد

    1. آپ نظر کی کمزوری کی وجوہات اور ان کے علاج کے بارے میں میرے آرٹیکل کا تفصیل سے مطالعہ فرمائیں اس ساری بنیادی معلومات موجود ہیں۔ لیزر کے ذریعے علاج ہی اس کا ممکنہ حل ہے اس سلسلے میں مجھ سے اگر آپ رابطہ کرنا چاہیں تو ویبسائٹ پر تفصیل موجود ہے
      http://www.drasifkhokhar.com/contact-us/

  14. السلام و علیکم
    ﮈاکٹر صاحب میری عمر 21 سال ھے .جب میں 13 سال کا تھا تو مجھے آنکھ پر چوٹ لگی تھی اور کافی دن آنکھ سرخ رھی چیک کروایا تو نظر کم تھی . میری دلی خواہش تھی کہ میں پولیس کی نوکری جوائں کروں مگر میں نظر کے مسلۓ میں افسردہ ھوں .میرا گلاسز نمبر 2.25 ھے مجھے کچھ مشورہ دیں کہ کیا لیزر آپریش وغیرہ سے علاج ممکن ھے کہ عینک سے جان چھوٹ جاے؟
    اللہ رب العزت آپکو لمبی عمر عطا فرمائیں آمین.
    جواب کا انتظار کرونگا اگر ممکن ھو تو .
    والسلام

  15. اسلام و علیکم داکٹر صاحب مجھے آر پی کی بیماری ہے مجھے رات کو کم نظر آتا ہے یعنی اندراتا کی بیماری ہے اس کا کوئی علاج ہے

  16. اسلام علیکم سر
    میری بیوی کی نظر بهت کمزور ھے حالانکه ان کی عمر صرف 20سال ھے ایک ڈاکٹر کو چیک کروایا تو انهوں نے ڈراپس دیے جن کو ایک هی بار استمال کیا تو میری بیوی نے بھت زیاده تکلیف کی شکایت کی اور ساتھ ھی نظر آنا بھی بند ھو گیا.تو ایک دوسرے ڈاکٹر نے آنکھ کو واش کیا تو دوبارا نظر آنا شروع ھو گیا .ڈاکٹر نے کھا ھے که ان کی آنکھیں بالکل ٹھیک ھیں نظر کی کمزوری ایک نسوانی بیماری کی وجه سے ھے.نظر کے ساتھ ساتھ کم سنتا ھے اور زکام بھی نھیں رکتا(زکام اور کھانسی شادی کے پھلے سے ھے)براے مھربانی میری صحیح راھنمایی فرمایں,شکریه
    محمد نعیم اختر 03064729989

  17. السلام علیکم ڈاکٹر صاحب میری نظر بہت کمزور ہے. بائیں آنکھ کا نمبر 12- ہے اور دائیں آنکھ کا نمبر 14- ہے. مہربانی فرما کر مجھے مشورہ دیں کہ کیا اِس کا علاج ممکن ہے؟ میں بہت پریشان ہوں.

    1. وعلیکم السلام آپ کی نظر کی کمزوری کا علاج بالکل ممکن ہے. تاہم یہ علاج بذریعہ لیزر نہیں ہو گا. دوسرے اپریشنز ہیں جن کی تفصیل میری ویبسائٹ پر موجود ہے. ایک بات بہرحال آپ کو معلوم ہونی چاہئے کہ یہ علاج مہنگا ہوتا ہے.

  18. السلام علیکم سر مجھے amblyopia کی بیماری ہے۔ ایک فٹ تک تو صحیح نظر آتا ہے لیکن اس سے آگے دھندلا۔ دور کا نمبر 3.00 – سلنڈر ہے۔ لیکن اس سے بھی صاف نظر نہیں آتا۔ بہت اچھے اچھے ڈاکٹروں کو چیک کروایا ہے، کوئی دوائی اور نہ کوئی عمل میری آنکھ کو فائدہ نہیں دے رہا۔ کیا آپ کوئی علاج بتا سکتے ہیں؟

  19. السلام علیکم میری عمر 26 سال ہے اور میری نظر بہت زیاده کمزور ہے. میں لیزر کے ذریعے علاج کروانا چاہتی ہوں. ایک آئی سپیشلسٹ نے مجھے کہا ہے کہ جب تک عینک کا نمبر تبدیل ہو رہا ہے اس وقت تک لیزر والا علاج مت کروائیں. میری نظر تو ایک جگہ رک ہی نہیں رہی. مجھے کوئی مشورہ دیں.

  20. ڈاکٹر صاحب السلام علیکم الله تعالٰی آپ کو دین اور دنیا دونوں میں کامیابیوں سے نوازے. آمین. میرے دو سوالات ہیں تھوڑا وقت نکال کر مجھے ان کے جوابات عنایت فرمائیں الله تعالٰی اس کی جزائے خیر عطاء فرمائے آمین. جواب اگر ای میل کر دیں تو مہربانی ہو گی.
    ۱. میری قریب اور دور دونوں نظریں کمزور ہیں جبکہ میرا کام اس نوعیت کا ہے مجھے قریب کا باریک کام کافی کرنا ہوتا ہے. میری حفاظتی عینکیں باقاعدگی سے استعمال کرتا ہوں. ہاتھوں پر دستانے پہنے ہوئے ہوں تو نہ تو باربار عینکیں بدلنا آسان ہوتا ہے اور نہ ہی اس اجازت دی جاتی ہے. کیا میں عینکوں سے نجات حاصل کر سکتا ہوں؟ الحمدلله مجھے کسی قسم کی کوئی بیماری نہیں ہے اور نہ ہی میں کسی قسم کوئی ادویہ استعمال کرتا ہوں.
    ۲. میرے دو بیٹے ہیں ایک کی عمر 21 سال ہے اور دوسرے کی 20 سال. وہ بھی کسی قسم کی بیماری میں مبتلاء نہیں ہیں اور کسی قسم کی کوئی ادویہ استعمال نہیں کرتے. وہ بھی عینک سے جان چھڑانا چاہتے ہیں. وہ مطالعہ بہت کرتے ہیں اور فٹبال کھیلنے کے بہت شوقین ہیں
    مہربانی کرکے مجھے میرے اپنے بارے میں اور میرے بیٹوں کے بارے میں مشورہ عنایت فرمائیں. والسلام خالد نعیم

    1. محترم خالد نعیم صاحب وعلیکم السلام میں جواب میں تاخیر پر بہت معذرت خواہ ہوں۔ بڑی عمر میں جب دور اور نزدیک دونوں نظریں کمزور ہو جاتی ہیں تو عام طور پر لیزر اپریشن نہیں کیا جاتا۔ کیونکہ اس عمر میں سفید موتیا اور دیگر بیماریوں کے امکانات بڑھ جاتے۔ اس کے علاوہ دور کی عینک تو  اُتر جاتی ہے لیکن قریب کی عینک نہیں اترتی۔ آپ کے بیٹوں کی جو کیفیت آپ نے بتائی ہے اُس کے مطابق وہ لیزر سے فائدہ اُٹھا سکتے ہیں۔ مزید تفصیلات آپ میرے نظر کی کمزوری والے آرٹیکل سے حاصل کر سکتے ہیں۔

  21. دائیں آنکھ کا نمبر 2.25 اور بائیس آنکھ کا 0.25 ڈاکٹر صاحب نے سفید موتیا بتایا ہے اور ایک سال بعد آپریشن کروانے کا کہا ہے.
    برائے مہربانی آپ رہنمائی کریں اللہ تعالٰی آپ کو جزائے خیر دے آمین.

  22. السلام علیکم سر میرا نام ہارون ہے، میری عمر 15 سال ہے. میری نظر بہت کمزور ہے. دائیں آنکھ کا نمبر 11.0 – ہے اور بائیں آنکھ کا نمبر 9.50 – ہے. ڈاکٹر کہتے ہیں کہ میرا لیزر اپریشن ہو گا. میری آنکھیں پیدائشی کمزور ہیں کیا کسی دوائی سے ٹھیک نہیں ہو سکتیں؟

  23. السلام علیکم سر میری بہن کی آنکھ میں کیمیکل چلا گیا تھا جس کی وجہ سے اسکے قرنیہ اور لینز دونوں پر ایک جھلی بن گئی تھی. اس کی آنکھ کا ایک اپریشن ہو چکا ہے مگر ابھی وہ جھلی پوری طرح نہیں ہٹی. کیا آپ اس کا کوئی علاج بتا سکتے ہیں؟

  24. السلام علیکم جب میرا موتیا کا اپریشن ہوا تھا اس وقت میری عمر 30 سال تھی. 10 سال تک میری نظر بالکل ٹھیک تھی لیکن کچھ دن پہلے سے میری بائیں آنکھ کمزور ہو گئی ہے. ڈاکٹر نے 1.50 – نمبر کی عینک لگانے کا کہہ دیا ہے. میری رہنمائی کریں کہ کیا کوئی طریقہ ممکن ہے کہ عینک لگائے بغیر نظر بہتر ہو جائے؟

    1. فیض صاحب وعلیکم السلام آپ نے معائنہ کروایا ہے جو یقیناً کسی آئی سپیشلسٹ سے ہی کروایا ہو گا. سفید موتیا کے اپریشن کے بعد اکثر لوگوں کے لینز کے پیچھے جھلی بن جاتی ہے جس سے نظر کم ہونے لگتی ہے اور بعض اوقات عینک کا نمبر بھی آنے لگتا ہے. اس کا علاج لیزر کے ذریعے ممکن ہوتا ہے.

  25. محترم جناب ڈاکٹر آصف صاحب، ٓلسلام و علیکم،
    میرا بیٹا عمر ۱۱ سال، ایک سال پہلے دونوں آنکھوں کے بھینگے پن کا آپریشن کروایا تھا جس میں سرجن کی غلطی سے ایک ٹانکہ گہرائی میں جانے کی وجہہ سے آنکھ میں انفیکشن ہو گیا اور آخر کار آنکھ سے نظر آنا بند ہو گیا اب کیا علاج ممکن ہے برائے مہربانی جواب ضرور دیں
    محمد عارف بشیر
    m_arif_bashir@yahoo.com
    cell# o345-0033555

    1. وعليكم السلام آپکے خط کو پڑھ کر بہت پریشانی ہوئی ہے اللہ تعالٰی آپ کے بیٹے پر کرم فرمائے۔ نظر کی بحالی کے امکان کا انحصار نظر کے خراب ہونے کی وجہ پر ہوتا ہے۔ آپکے بیٹے کی آنکھوں کا معائنہ کرنے کے بعد ہی کچھ کہنا ممکن ہے البتہ اگر روشنی کا بالکل پتہ ہی نہیں چلتا تو پھر تو بالکل امکان نہیں ہے۔

  26. ‏ السلام علیکم ڈاکٹر صاحب ہم غریب لوگ ہیں اور میرے بھتیجے کی آنکھ زیادہ خراب ہے۔ ڈاکٹروں نے لیزر اپریشن کا مشورہ دیا ہے۔ پلیز ہماری رہنمائی کریں۔

  27. السلام علیکم ڈاکٹر صاحب میری امی کی نظر بہت کمور ہے۔ اُنکی عمر 45 سال ہے۔ پلیز میری رہنمائی فرمائیں کہ اُن کی نظر کو بہتر بنانے کیلئے میں کیا کر سکتی ہوں؟

  28. ڈاکٹر صاحب بیس سال سے میری نظر کمزور ہے. اس وقت میری عمر 29 سال ہے. میری عینک کا نمبر 5 ہے.کیا مجھے سے علاج کروانا چاہئے؟

  29. السلام علیکم میری دور کی نظر 2.0- ہے۔ رات کو موٹرسائیکل چلانے میں بہت دقت ہوتی ہے۔ روشنی برادشت نہیں ہوتی۔ اِسی طرح کلاس روم میں وائیٹ بورڈ پر لکھا ہوا صاف نظر نہیں آتا۔ اِس معملے میں میری رہنمائی فرمائیں۔

  30. میری دور کی نظر کمزوری 3.75- ہے۔ میرا ارادہ ہے کہ میں ملٹی فوکل لینز لگوا لوں کیا اس سے صحیح ہو گا یا لیزر کے ذریعے علاج سے؟

    1. آپ میرے آرٹیکل کو غور سے پڑھیں۔ نظر کی کموری والے آرٹیکل میں تفصیل سے بتایا گیا ہے کہ نظر کی کمزوری کیوں ہوتی ہے اور لیزر کے ذریعے اِسے کیسے صحیح کیا جاتا ہے۔ اِس کے مطالعے سے آپ سمجھ جائیں گی کہ مٹی فوکل لینز کا اِس سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ سفید موتیا کے علاج والے آرٹیکل میں ملٹی فوکل لینزز کی تفصیل موجود ہے کیونکہ دراصل یہ سفید موتیا کے علاج کا ایک طریقہ ہے۔

  31. السلام علیکم ڈاکٹر صاحب اللہ آپ کو جزائے خیر عطاء فرمائے۔ اللہ تعالیٰ آپ کو اسی طرح بلاتفریق انسانیت کی خدمت کی توفیق عطاء کرتا رہے۔ میری عمر 26 سا ہے اور میری نظر 2.5 کمزور ہے۔ لیزر کے بارے میں رہنمائی فرمائیں۔ اس علاج پر کتنا خرچہ آتا ہے؟ چشمہ کا غلط نمبر استعمال کرنے سے کیا نظر پر اثرات مرتب ہوتے ہیں؟ اگر نظر لمبے عرصہ تک چیک نہ کروائی جائے تو کیا اِس سے نقصان ہوتا ہے؟ مہربانی کرکے رہنمائی فرمائیں۔

  32. اسلام علیکم سر میری بچپن سےدائیں آنکھ کی نظر کمزور ھے. عینک کا نمبر 6.2 ھے۔ 20 سال پہلے بھی یہی تھا اور آج بھی وھی ھے. لیکن مجھے پھر بھی صاف نظر نہیں آتا. ڈاکٹر کہتے ھیں کہ اسے ایسے ھی رہنے دو! اور جب چشمہ لگاتا ہوں تو دونوں آنکھوں سے چیزیں الگ الگ نظر آتی ھیں .اور چشمہ گھمانے سے چیزیں بھی گھومنے لگتی ھیں. میری عمر 40 سال ھے کیا لیزر سے علاج ممکن ھے؟ یا کوئی اور علاج ممکن ہے؟
    1. محترم سعید خان صاحب میں معذرت خواہ ہوں کہ جواب میں تاخیر ہو گئی۔ جو علامات آپ نے بتائی ہیں ایسے لگتا ہے کہ آپ کی آنکھ میں ٹیڑھا پن بھی ہے اور یہ آنکھ amblyopia کی بیماری کا شکار ہو چکی ہے۔ تاہم دو کیوں نظر آتے ہیں اِس بات کو میں پوری طرح سمجھ نہیں پا رہا۔ کیونکہ amblyopia میں عموماً آنکھ کام چھوڑ دیتی ہے جس سے دو نظر نہیں آتے۔ اِس مسئلے کی سمجھ تو معائنہ کر کے ہی آ سکتی ہے۔ اِس کا علاج لیزر سے ہونے کا امکان ہو سکتا ہے۔ لیزر سے دونوں آنکھوں کے درمیان اتنے بڑے فرق کو ختم کیا جا سکتا ہے جس سے دو نظر آنے بند ہو سکتے ہیں۔ اِسی طرح اگر ٹیڑھا پن ہے تو اُس کا علاج کرنے سے بھی اِس مسئلے کے حل کا امکان ہو سکتا ہے۔

      1. سلام آپ نے جواب دیا. میری بد نصیبی کہ کافی عرصہ میرے پاس موبائل نھیں تھا..آج جواب پڑھ کے خوشی کوئی.
        دو دو نظر آنے کا مطلب. جب میں عینک لگا تا ھوں اور ٹی وی کو غور سے دیکھتا ھوں تو دائیں آنکھ سے ایک اور ٹی دی نظر آتا نے. جو کہ سائز میں تھوڑا چھوٹا جاتا نے. مجھے نظر تو آتا نے پر دھندلا سا. قرآن پاک صرف پانچ انچ سے پڑھ سکتا ھوں ایک آنکھ سے.موٹر سائکل میرے گھر کی ضرورت نے. اب لائسنس کیسے بنواؤں؟

  33. میری عینک کا نمبر کمپیوٹر پر کام کے لیے (0.75+) اور پڑھنے کے لیے (1.5+) ہے۔ کیا لیزر سے میری نظر ٹھیک ہوسکتی ہے۔ میری عمر (45) سال ہے۔

    1. جناب عادل صاحب آپ کے مسئلے کا لیزر کے ذریعے علاج ممکن نہیں ہے۔ آپ میرے آرٹیکل کو تفصیل سے پڑھ انشاءاللہ تفصیلی معلومات مل جائیں گی۔

  34. Dear dr.Asif,A.O.A. My 22 yr.daughter has R-7,L-8.Can it be corrected by laser to get rid of glasses and if yes,where and when to consult u.pl.info.thanks.Tariq

      1. سارہ بیٹے آپ اپنی آنکھوں کا اپنے قریبی کسی آئی سپیشلسٹ سے معائنہ کروائیں انشاءاللہ آپ کی آنکھیں ٹھیک ہو جائیں گی۔ لیکن اس طرح بغیر معائنہ کے دوائیاں استعمال کرنے سے خدانخواستہ نقصان ہو سکتا ہے۔

  35. السلام علیکم سر میرے چھوٹے بھائی کی نظر کمزور ہے اور اُسے تین دفعہ نظر کمزوری کا اعتراض لگا کر medically unfit کر دیا گیا ہے۔ کسی نے اُس کو لیرز کے ذریعے نظر کا علاج کروانے کا مشورہ دیا ہے۔ کیا اِس علاج کے ذریعے اُس کی نظر ٹھیک ہو سکتی ہے اور نیوی میں بھرتی ہو سکتا ہے؟

  36. اسلام علیکم
    جناب میری دور کی نظر کمزور ہے منفی1 ہے لیزر تھراپی کے زریعئے علاج پہ کتنا خرچ آئے گا برائے مہربانی مجھے ای میل کر دیجے
    email- fazalkareemr@yahoo.com

  37. اسلام علیکم سر. میری نظر پیدائشی کمزور ہیے کیا میری نظرٹھیک ھو سکتی ھے. مجھے 16نمبرعینک لگی ہوئی ہیے

  38. اسلام علیکم سر بہت عرصہ پہلے آنکھوں کی دوائی میں استعمال ہونے والا خالص ایسڈ ڈالنے کی وجہ سے میری نظر کمزور ہو گئی ہے اور آنکھیں باہر اندر سے جل گئی تھی بعد ڈراپ وغیرہ اور علاج وغیرہ کروانے سے زخم تو ٹھیک ہو گے ہیں لیکن نظر اب اڑاهائی نمبر دور کی کمزور ہے اور کبھی کبھی خارش وغیرہ ہوتی ہے الرجی کی وجہ سے کیا میری عینک اتر سکتی ہے اور میرا نمبر گٹتا بڑتا رہتا ہے اور میں فی الحال سعودی عرب میں ہوں اگر ممکن ہے تو آپ سے کیسے رابطہ کیا جائے

    1. عزیز بھائی آپ جو علامتیں بتا رہے ہیں ان کے مطابق تو کوئی مایوس کن صورتحال نظر نہیں آ رہی. میرے رابطے کے حوالے سے تفصیلات آپ کو میرے پیج “Contact Us” سے مل سکتی ہیں.

  39. السلام علیکم ڈاکٹر صاحب میری عمر 29 سال ہے. میں پچھلے 10 دس سال سے 10.0 – نمبر کی عینک لگا رہا ہوں. کیا لیزر اپریشن سے میری اتر سکتی ہے؟ اور نظر دوبارہ 6/6 ہو سکتی ہے؟ مہربانی کرکے میری اس معاملے میں رہنمائی فرمائیں. جزاک اللہ

    1. محترم عدنان صاحب وعلیکم السلام جو صورتحال آپ نے بتائی ہے اس کے مطابق تو ایسے لگتا ہے کہ آپ کا اپریشن ہو سکتا ہے. یقینی بات تو معائنہ کئے بغیر نہیں بتائی جا سکتی. عمومی معلومات کے لئے میرے آرٹیکل “نظر کی کمزوری: وجوہات، علاج” کا مطالعہ فرمائیں آپ کے سارے سوالوں کے جواب مل جائیں گے.

  40. ڈاکٹر صاحب میری امی کی آنکھوں میں بہت جلن ہوتی ہے. آنکھیں دکھتی ہیں اور زبان میں بھی جلن ہوتی ہے. اَن کی دور کی نظر کمزور ہے لیکن صبح اٹھتے ہی بہت بھاری محسوس ہوتی ہیں. کافی علاج کروایا ہے لیکن کوئی افاقہ نہیں ہوا. مہربانی کرکے علاج بتائیں اور گذارش ہے تاخیر نہ کریں جلدی علاج بتا دیں.

    1. بیٹا میں معذرت خواہ ہوں کہ آپ نے جو مسائل اپنی امی کی آنکھوں کے بتائے ہیں اِن کا علاج کوئی ڈاکٹر بھی معائنہ کئے بغیر نہیں کر سکتا.

  41. السلام علیکم محترم
    آپ کا یہ آرٹیکل غیر معمولی حد تک معلوماتی ہے ۔ میں اپنی نظر کا مسئلہ تلاش کر رہا تھا شاید مجھے سمجھ نہیں آیا ۔ اگر آپ علامات پر غور کریں تو آپ کے علم سے میں بھی فائدہ حاصل کر سکتا ہوں۔
    محترم میں پندرہ سال سے مسلسل کمپیوٹر استمعال کر رہا ہوں میری عمر ۲۹ سال ہے ۔ آج کل میں اپنی ایک آنکھ میں درد محسوس کرتا ہوں ، اور ایسا لگتا ہے کہ میں ایک آنکھ سے دیکھ رہا ہوں جب درد محسوس کرنے والی آنکھ بند کر کے دوسری آنکھ سے دیکھتا ہوں تو اس آنکھ کی بینائی قدرے دھندلی معلوم ہوتی ہے ۔
    اس بارے میں رہنمائی فرمائیں
    والسلام
    امداد حسین علوی

    1. محترم علوی صاحب آپ اپنی نظر کا معائنہ کروائیں. ایسے لگتا ہے کہ ایک آنکھ کی نظر کمزور ہے جس سے دوسری آنکھ کو زیادہ کام کرنا پڑتا ہے.

  42. السلام علیکم میری عمر 20 سال ہے اور 13 سال سے میں عینک استعمال کر رہی ہوں. اکثر سر میں بہت درد ہوتا ہے. ابھی حال ہی میں نظر ٹیسٹ کروائی ہے. اب دونوں آنکھوں میں 6 نمبر ہو گیا ہے. میں اپریشن کروانا چاہتی ہوں. کیا یہ ٹھیک رہے گا؟ اپریشن کے اخراجات کتنے آئیں گے؟

  43. السلام علیکم ڈاکٹر صاحب میری عمر 27 سال ہے اور میری نظر بچپن سے خراب ہے. دائیں آنکھ کا نمبر +7.00/-3.00@167° اور بائیں آنکھ کا نمبر +7.00/-3.00@8° ہے. مجھے معلوم ہے کہ میرا Lasik اپریشن ممکن نہیں. لیکن کیا کسی دوسرے طریقے سے مجھے عینک سے نجات مل سکتی ہے؟ اس پر کتنا خرچہ ہو گا؟

    1. آپ مہربانی کرکے میرا نظر کی کمزوری اور اسکے علاج کے متعلق آرٹیکل غور سے پڑھیں آپ کے سارے سوالوں کا جواب پہلے سے موجود ہے.

      1. سر جس طرح آپ نے یہ آرٹیکلز دیئے ہیں بہت زبردست ہے۔ سر اگر ایک آرٹیکل اس پر بھی لکھ دیں کہ Moxifloxacine کا آنکھوں میں کیا کردار ہے تو یہ بہت اچھا ہو گا۔

  44. السلام علیکم ڈاکٹر صاحب میری بیٹی کی عمر 15 سال ہے اور اس کو قریب کی نظر کیلئے عینک لگ گئی ہے. کیا اس کو عینک مستقل طور پر پہننا ضروری ہے؟

    1. جی مستقل طور پہننے سے ہی پوری طرح فائدہ ہو سکتا ہے. آپ نظر کی کمزوری کے بارے میں میرے آرٹیکل کا مطالعہ کریں اس میں تفصیلی معلومات دی گئی ہیں.

  45. ڈاکٹر صاحب میرے ساتھ بھی آنکھوں کا ایک مسئلہ درپیش ہے جسکی وجہ سے میں کافی پریشان ہوں مسئلہ یہ ہے کہ میں تیز سفید روشنی میں نہیں دیکھ سکتا جیسے دوپہر کے وقت یا آسمان پر دن کے وقت بادل ہو اور سورج نظر نہ آ رہا ہوں تو اسوقت جو سفیدی ہوتی ہے ایسے میں میرا ویژن صاف نہیں ہوتا اور انکھوں کے سامنے ہلکے دھبے سے نظر آتے ہے اور سورج کی روشنی میں سفید دیوار یا سفید کاغذ دیکھنے سے بھی یہی کیفیت ہوتی ہے اور اگر ہلکے کالے رنگ کی عینک استعمال کروں تو پھر صحیح ہوتا ہے برائے مہربانی رہنمائی فرمائیں ﷲ آپ کو اجر عظیم عطا فرمائیں

  46. I am 22, My left eye is sloweye and i use glasses of +2.Is there any way to improve the eye sight e.g laser or any other treatment?

  47. السلام عليكم  ڈاکٹر صاحب ميري آنکھوں میں تهكن رہتی ہے اور نگاہ بھی كم هو رہی ہے۔ پہلے عینک کا نمبر 1.5- تھا اب 1.75- ہو گیا ہے علاج بتائیں۔

    1. محترم قمر صاحب وعلیکم السلام آپ کے سوال کا تفصیلی جواب میرے آرٹیکل نظر کی کمزوری میں موجود ہے مہربانی فرما کر اُس کا مطالعہ فرما لیں۔ اگر پڑھنے کے بعد بھی واقعی کوئی سوال رہ گیا تو پوچھ لیجئے گا۔

  48. السلام علیکم ڈاکٹر صاحب میں تقریباً گیارہ سال سے عینک استعمال کر رہی ہوں۔ میرا دور کی نظر کمزور کا مسئلہ ہے۔ اب میں عینک سے تنگ آ گئی ہوں۔ اب تو ایک فٹ کے فاصلے پر کافی دھند ہوتی ہے۔ کیا عینک ختم ہو سکتی ہے؟

  49. ڈاکٹر صاحب السلام علیکم مجھے بتایا گیا ہے کہ دور کی نظر کیلئے میں کنٹیکٹ لینز لگوالوں جبکہ نزدیک کا کام کرتے ہوئے چشمہ استعمال کر لیا کروں ۔ اِس سے لگاتار عینک استعمال کرنے کی کوفت سے مجھے نجات مل جائے گی۔ مجھے تجویز کیا گیا ہے کہ وہ کنٹیکٹ لینز استعمال کروں جن کو رات کو اُتارنا ضروری ہوتا ہے۔  برائے مہربانی مشورہ عنایت فرمائیں۔ شکریہ

    1. محترم ظہوراحمد صاحب سب سے توپہلے تومیں معذرت خواہ ہوں کہ حج کی مصروفیات کے باعث میں آپ کو جواب جلدی نہیں دے سکا۔ آپ سے گذارش ہے کہ آپ اپنی عمر بتائیں اور عینک کا نمبر بتائیں تاکہ آپ کے مسئلے کے سلسے میں آپ کی رہنمائی کی جا سکے۔

  50. سر میں آپ کے جواب سے بالکل مطمئن نہیں ہوا۔ میں نے آئی سپیشلسٹ، سکن سپیشلسٹ، اور سائیکولوجسٹ سے مشورہ کیا ہے لیکن کوئی بھی میرے مسئلے کو نہیں سمجھ سکا۔

    میرا مسئلہ یہ ہے کہ جب مجھے پسینہ آتا ہے خصوصاً سر میں تو پانچ منٹ کے اندر میری آنکھوں کا فوکس خراب ہو جاتا ہے۔ میں کسی چیز پر نظر نہیں ٹکا سکتا۔ پھر جب میں کچھ دن نمک کا استعمال زیادہ کرتا ہوں تو 80 فیصد تک نظر بہتر ہو جاتی ہے۔ اِس طرح آہستہ آہستہ ایک سال کے اندر میری نظر 3.00 – تک کمزور ہو چکی ہے۔ پلیز میرے مسئلے پر غور کریں اور مجھے جواب دیں۔ کرامت

    1. محترم کرامت صاحب میں معذرت خواہ ہوں کہ میرے جواب سے آپ مطمئن نہیں ہو سکے۔ میرے خیال میں آپ مختلف چیزوں کو خلط ملط کر رہے ہیں جس کے باعث آپ کو سمجھ نہیں آ رہی۔ ذرا سمجھنے کی کوشش کریں:

      1. پہلی بات تو یہ ہے کہ نظر کیوں کمزور ہوتی ہے اور کیسے ٹھیک ہوتی ہے؛ اِس کی صحیح معلومات حاصل کریں۔ نہ پسینہ آنے سے کمزور ہوتی ہے اور نہ نمک استعماک کرنے سے ٹھیک ہوتی ہے۔ آپ غلط چیزوں کو غلط چیزوں سے مربوط کر رہے ہیں۔
      2. جہاں تک پسینہ آنے اور وقتی طور پر نظر دھندلا جانے کا تعلق ہے یہ ایک مختلف معاملہ ہے جس کا تعلق مختلف اعصابی بیماریوں اور خون کی نالیوں کی بیماریوں سے ہو سکتا ہے؟
      3. ایک سال میں نظر مسلسل کمزور ہونے کی کئی وجوہات ممکن ہیں مثلاً
        1. ایک وجہ تو آانکھ کی نشوونما ہے۔
        2. دوسری وجہ فوکسنگ سسٹم کی کمزوری بھی ہے جو مثبت نمبر کی عینک لگنے والوں میں ہوتی ہے۔
        3. تیسری وجہ آنکھ کے اندرونی دباؤ کا زیادہ ہونا بھی ہے جو بار بار نمبر بدلنے کا سبب ہو سکتا ہے۔
        4. چوتھی وجہ شوگر بھی ہے جو اگر صحیح طرح کنٹرول نہ کی جائے تو نمبر میں تبدیلیوں کا سبب بن سکتی ہے۔
        5. پانچویں وجہ یہ بھی ہے کہ اگر نمبر چیک کرنے والا ڈاکٹر نہ ہو تو باربار نمبر غلط لگایا جاتا ہے جو ظاہر ہے ہر دفعہ مختلف ہوتا ہے۔
        6. چھٹی وجہ سفید موتیا کا آغازبھی ہو سکتی ہے۔
        7. ساتویں وجہ آنکھ کے اندرونی حصوں کی سوزش posterior uveitis بھی ہو سکتی ہے۔

      اِن میں سے تقریباً ساری وہی ہیں جو معائنہ کرکے ہی تشخیص کی جا سکتی ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ میں نے دو حل تجویز کئے ہیں:

      1.  اپنا معائنہ کروائیں؛ آنکھوں کا بھی اور پورے جسم کا بھی۔
      2. اگر ایک ڈاکٹر صاحب سے آپ مطمئن نہیں ہیں تو کسی دوسرے سے معائنہ کروا لیں۔
  51. ڈاکٹر صاحب میری نظر کمزور ہے۔ ڈاکٹر سے چیک کروایا ہے انھوں نے کہا ہے کہ اگرچہ نظر کمزور ہے لیکن آنکھوں میں کوئی بیماری نہیں ہے۔ اگر بیماری نہیں ہے تو پھر نظر کی کمزوری کی کیا وجہ ہے؟

  52. جناب ڈاکٹر صاحب چند دن پہلے مجھے بہت زیادہ پسینہ آیا جس کے بعد اچانک مجھے نظر کمزور محسوس ہونے لگی۔ اب پہلے سے بہتر ہے لیکن ابھی تک پہلے جیسی نہیں ہو سکی۔ آپ اس سلسلے میں میری کیا مدد کر سکتے ہیں؟ میں آپ کے جواب کا انتظار کروں گا۔ مہربانی کر کے جواب ضرور دیجئے گا۔

  53. محترم ڈاکٹر صاحب
    اسلام علیکم
    آپ کے دونوں آرٹیکل پڑھے۔۔۔ کمپیوٹر والے آرٹیکل میں ایک بات جو آپ نے کہی کے معائنے کے دوران مریض مطمئن ہو جاتا ہے لیکن عینک لگانے کے بعد اور معاملات ہوتے ہیں۔۔ میرے ساتھ بھی کچھ یہی ہے۔
    مجھے اپنی نطر کی کمزوری کا احساس تب ہوا جب قرآن مجید کے تراجم اور تفاسیر پڑھنے میں مسئلہ در پیش ہوا اور پڑھائی کے دوران آنکھوں سے پانی آنا شروع ہو جاتا۔۔ساتھ میں بائیک چلاتے ہوئے رات کے وقت بھی مسئلہ درپیش ہوتا۔
    نظر چیک کروائی تو انہوں نے اوپر والے نمبر کی عینک تجویز کر دی۔عینک لگانے سے قرآن کے تراجم اور اسی طرح کی اور کُتب وغیرہ پڑھنے کا مسئلہ تو حل ہو گیا۔ لیکن پانچ چھ فٹ سے زیادہ فاصلہ پر دیکھنے میں دکھت ہوتی ہے۔ ساتھ میں تھوڑی دیر عینک کا استعمال کرنے سے آنکھوں میں جلن شروع ہو جاتی ہے۔میرا چونکہ کمپیوٹر یا لیپ ٹاپ پر کام تین چار گھنٹے سے زیادہ ہوی ہوتا ہے۔
    اس لیے آپ سے مشورہ لینا مناسب سمجھا۔ کہ مجھے کیا کرنا چاہیے۔
    ساتھ میں میرا ایک اور سوال تھا جس کا آپ نے جواب عطا نہیں فرمایا ؎
    اثمد سرمہ کے متعلق نبی صلی اللہ علیہ وسلم کے حدیث مبارکہ ہے کہ رات کو سوتے وقت استعمال کیا کرواس سے نظر تیز ہوتی ہے۔
    اس پر آپ کی کیا تحقیق ہے۔

    1. قیصر مصطفیٰ صاحب وعلیکم السلام میں بہت شکرگذار ہوں کہ آپ نے میرے دونوں آرٹیکل پڑھے اور اپنے مسائل کی نوعیت کو سمجھنے پر عرق ریزی کی۔

      1. پہلی بات تو یہ ہے کہ کمپیوٹر ویژن سنڈروم کے امکان کو ذہن میں رکھ کر اپنے مسائل کو حل کرنے کے امکان پر غور کریں۔ آپ کی بہت ساری علامات مجھے اِس مرض کا حصہ معلوم ہوتی ہیں۔
      2. مجھے یقین ہے کہ مرد جو عمر بتاتے ہیں عموماً وُہی اُن کی عمر ہوتی ہے اِس لئے مجھے مجبوراً یہ مشورہ دینا پڑ رہا ہے کہ اپنی عینک کا نمبر کسی آئی سپیشلسٹ ڈاکٹر صاحب سے دوبارہ چیک کروائیں۔ کیونکہ اگر نمبر صرف نزدیک کیلئے تجویز کیا گیا ہو تو اُس میں تو واقعی تین چار فٹ کے فاصلے پر دیکھنے میں دقت ہوتی ہے لیکن آپ کی عمر میں ایسا نمبر تجویز نہیں کیا جاتا۔ اگر عمر ٹھیک ہے تو پھر یقیناً نمبر ہی غلط ہو گا!
      3. جہاں تک سُرمے کی بات ہے، میرے علم میں ایسی کوئی حدیث نہیں ہے۔ لیکن اگرطب نبوی میں واقعی کوئی ایسی بات ہے تو پھر یہ سو فیصد حقیقت ہے۔ تاہم ڈاکٹر خالد غنوی صاحب نے اِس سلسے میں جو قیمتی کام کیا ہے اور ظب نبوی کے نام سے شاید چار جلدوں پر مشتمل کتاب لکھی ہے اُس میں انھوں نے ایک حدیث لکھی ہے جس کا مفہوم یہ ہے کہ نسخہ ہر شخص تجویز نہ کرے، صرف وُہی شخص تجویز کرے جس نے اِس کا علم حاصل کیا ہوا ہو۔ چناچہ سُرمہ کسے استعمال کرنا چاہئے؟ کس طریقے سے استعمال کرنا چاہئے؟ کس طریقے سے تیار کرنا چاہئے؟ اِس طرح کی بہت سی چیزیں ہیں جن پر حضور ﷺ کی دی ہوئی دیگر ہدایات کی روشنی میں تحقیق کی ضرورت ہے۔ کاش کوئی ادارہ ہو جو اِس طرح کے کام کرے۔ اور اُن تحقیقات کو بھی تلاش کرے جو پہلے سے کی جا چکی ہیں! میں فی الحال آپ کے سوال کا جواب دینے سے قاصر ہوں۔
  54. اسلام علیکم
    میرا نام قیصر مصطفی ہے۔ میری عمر32 سال ہے۔ میں نے حال ہی میں عین استعمال کرنا شروع کی ہے جو کہ

    • RE……+1.25 Sphere
    • LE…….+0.75 Sphere, 0.75 Cylinder, 80 Axis Hai.

    مجھے ایک تو اس کا نمبر کنفرم کریں اور دوسرا لیپ ٹاپ اور کمپیوٹر پر کام کرنے کے لیے ریڈیئشن گلاسز لگوائے ہیں کیا وہ مفید ہے یا نہیں۔
    اور اثمد سرمہ سے متعلق حدیث مبارکہ بھی ہے کہ نظر تیز کرتا ہے اس کے متعلق بھی آپ کی کوئی تحقیق ہے؟
    کیا نظر کی کمزوری وٹامن سی کی کمی کی وجہ سے بھی ہو سکتی ہے؟
    جو نظر کی پرابلم مجھے ہے وہی میرے ایک دوست کو ایک یا دو سال قبل تھی لیکن اس کو کچھ ادویات دے کر فارغ کر دیا گیا لیکن مجھے عینک کا مشورہ دیا گیا ہے؟
    اس کے متعلق اپنی معلومات فراہم کریں
    جزاک اللہ

    1. محترم قیصر مصطفیٰ صاحب وعلیکم السلام آپ کی عینک کا نمبر اگر کسی آئی سپیشلسٹ نے چیک کیا ہے تو پھر آپ کنفرم کیوں کروانا چاہتے ہیں؟ اور کنفرم تو چیک کر کے ہی ہو سکتا ہے۔ کمپیوٹر سے متعلق اپنے سوال کے جواب کیلئے آپ کو میرے آرٹیکل کمپیوٹر اور آنکھیں کا مطالعہ کرنا ہو گا۔ باقی معلومات بھی اسی ویبسائیٹ پر نظر کی کمزوری والے آرٹیکل میں موجود ہیں ذرا ہمت کر کے مطالعہ فرما لیں۔

  55. السلام علیکم سر میری عمر 27 سال ہے اور میری دور کی نظر کمزور ہے۔ عینک کا نمبر 4.75- ہے۔ میں عینک اور لینز وغیرہ سے جان چھڑانا چاہتی ہوں تاکہ میں ایک نارمل انسان کی طرح رہ سکوں، پلیز مجھے کوئی مشورہ دیں۔

  56. السلام علیکم میرا نام آصف ہے اور میری عمر 33 سال ہے۔ ڈاکٹر صاحب مجھے شوگر ہے اور پچھلے دو سال میں میری نظر منفی تین تک کمزور ہو گئی ہے۔ میری آنکھوں میں سفید موتیا بھی بننا شروع ہو گیا ہے۔ سر میں لیزر اپریشن کروانا چاہتا ہوں تاکہ میری عینک سے جان چھوٹ جائے۔ میری رہنمائی کیجئے کہاں سے کرواؤں اور اس کا کتنا خرچہ ہوتا ے؟

    1. محترم آصف صاحب وعلیکم السلام آپ کی نظر کی کمزوری بنیادی طور پر شوگر کی بیماری کے باعث ہے۔ بیماری کا علاج اُس کے سبب کو سامنے رکھ کر کیا جاتا ہے۔ لیزر کا تو آج کی بیماری میں کوئی کردار نہیں ہے۔

      • آپ سب سے پہلے تو شوگر کو نہ صرف کنٹرول کریں بلکہ مسلسل کنٹرول رکھنے کی کوشش کریں۔ بہت زیادہ امکان ہے کہ آپ کی آنکھ کا قدرتی لینز خود ہی دوبارہ نارمل ہو جائے اور نظر بہت حد تک بغیر کسی اپریشن کے ہی ٹھیک ہو جائے۔
      • اگر یہ نہ ہو سکا تو پھر آپ کو فیکو اپریشن کروانا پڑے گا نہ کہ ایگزائمر لیزر۔
      • اِسی طرح آپ کو اپنی آنکھوں کے پردوں کا بھی معائنہ کروانا ہو گا ہو سکتا ہے نظر کی کمزوری کا سبب پردوں کا شوگر سے متاثر ہونا ہو۔
      1. ڈاکٹر صاحب آپ کے جواب دینے کا بہت شکریہ۔ سر میں نے دو ماہ پہلے سروسز ہسپتال اور میو ہسپتال میں چیک کروایا تھا، اُن کا کہنا ہے کہ آپ کی آنکھ کا پردہ بالکل ٹھیک ہے۔ شوگر نے آپ کے پردوں کو متاثر نہیں کیا ہے۔ آپ کی رہنمائی پر غور کر کے مجھے بھی یہی محسوس ہوتا ہے کہ بنیادی وجہ نظر کی کمزوری ہی میرا مسئلہ ہے۔ کیا آپ اپنا رابطہ نمبر دے سکتے ہیں؟

  57. السلام علیکم اور جزاک اللہ خیر

    میں نے نظر کی کمزوری سے متعلق آپ کا آرٹیکل اچھی طرح پڑھا ہے، اُسے پڑھ کر ہی امید لگی تھی کہ شاید میری بھی چشمے سے جان چھوٹ جائے۔ اُس میں آپ نے فرمایا ہے کہ لیزر سے علاج ہو سکتا ہے؛ ایک صاحب کے سوال کے جواب میں آپ نے فرمایا کہ یہ صرف چالیس سال سے کم عمر میں ہو سکتا ہے۔ اللہ تعالیٰ آپ کے سب مریضوں کو آپ کے ہاتھوں صحت عطا فرمائے اور آپ کے ہاتھوں میں مزید شفا ڈالے آمین۔  اللہ حافظ

    1. محترم جناب شاد صاحب وعلیکم السلام میں مشکور ہوں کہ آپ میرے آرٹیکل کا مطالعہ فرما چکے ہیں۔

      • اصل میں مَیں آپ کو اب بھی ماشاءاللہ جوان ہی سمجھتا ہوں۔ آپ کی عمر میں لیزر سے نہیں بلکہ دیگر طریقوں سے عینک اتارنے کے تجربات ہو رہے ہیں سچی بات ہے کہ ابھی تک اُن کے نتائج متنازعہ ہیں۔
      • دوسری وجہ یہ ہے کہ اِس عمر میں عموماً سفید موتیا کسی نہ کسی درجہ میں شروع ہو چکا ہوتا ہے اور وہی نظر کی کمزوری کا سبب بن رہا ہوتا ہے اس لئے اگر عینک اُتارنا ہی ضروری ہو تو پھر فیکو آپریشن کرکے ملٹیفوکل لینز ڈالنے سے یہ مسئلہ بہت حد تک حل ہو جاتا ہے۔
      • تیسری وجہ بھی ہے اور وہ بھی بہت اہم ہے۔ آپ اچھی طرح جانتے ہیں کہ ہر آپریشن کے ساتھ کچھ نہ کچھ خدشات بھی وابستہ ہوتے ہیں اِس لئے میں تو یہی مشورہ دیتا ہوں کہ جب تک کسی بھی اپریشن سے بچنا ممکن ہو بچنا چاہئے۔
  58. السلام علیکم اللہ آپ کو سلامت رکھے۔ ترجمان القرآن کے جو تین مضامیں آپ نے پوسٹ کئے ہیں اُن سے دل، دماغ، اور آنکھیں سب روشن ہو گئیں اللہ آپ کو جزائے خیر عطا فرمائے۔

    میری دو مشکلات ہیں جن کے بارے میں میں آپ سے رہنمائی چاہتا ہوں:

    1. میری امی کی آنکھوں میں پٹوالوں کی وجہ سے خارش رہتی ہے اور سُرخ بھی رہتی ہیں۔ دو بار اُن کا اپریشن ہو چکا ہے۔
    2. میری عمر ساٹھ سال ہے، میں بائیفوکل عینک استعمال کرتا ہوں۔ کیا مجھے عینک سے چھٹکارا مل سکتا ہے؟ میری عینک کے نمبر کا نسخہ بھی میرے خط کے ساتھ منسلک ہے۔

    چوہدری فاروق شاد کویت

    1. محترم جناب شاد صاحب وعلیکم السلام میں مشکور ہوں کہ آپ نے ان مضامین کا مطالعہ فرمایا۔

      آپ نے جو دو سوال کئے ہیں اس سلسلے میں عرض ہے کہ

      • ایک تو آپ میرے آرٹیکل نظر کی کمزوری کا بغور مطالعہ فرمائیں آپ کو تفصیل سے آپ کی اپنی نظر کے حوالے سے جواب مل جائے گا۔ مختصراً عرض ہے کہ بہتر یہی ہے آپ عینک کو خوش دلی سے استعمال کریں اور اللہ تعالی کا شکر ادا فرمائیں۔ معمولی نمبر کی عینک ہے اور آپ کی عمر میں تو لوگ بیچارے پتہ نہیں کن کن مشکلات کا شکار ہوئے ہوتے ہیں آپ تو ماشاءاللہ عینک سے بالکل ٹھیک دیکھ رہے ہیں۔
      • جہاں تک آپ کی والدہ محترمہ کی تکلیف کا تعلق ہے اس کے بارے میں معائنہ کیے بغیر جو بھی آپ کو نسخہ تجویز کرے گا وہ آپ کی بھلائی نہیں کرے گا کیونکہ اس طرح کے نسخے سے نقصان کا خدشہ ہے
  59. ڈاکٹر صاحب السلام علیکم رمضان مبارک ہو۔ کل میں نے ایک ای میل کی تھی مجھے لگتا ہے رمضان المبارک کی مصروفیات کی وجہ جواب نہیں دے سکے۔ مہربانی کرکے پہلی فرصت میں مجھے ای میل کرکے جواب دیں۔ جزاک اللہ خیر

    1. محترم شاد صاحب آپ کی دوسری ای میل بھی وصول ہو گئی ہے میں آپ سے دوبارہ گزارش کرتا ہوں کہ کہ اپنے سوالات کو ویبسائیٹ پر کمنٹس میں لکھیں اس سے آپ کو جواب بهی مل جائے گا اور چونکہ اس سے آپ ہی کی طرح کے سوالات والے کئی اوروں کو بھی فائدہ ہو گا چنانچہ آپ کو ثواب بھی مل جائے گا

  60. السلام علیکم میری عمر 43 سال ہے۔ بہت پہلے میرے سر میں شدید درد ہوتا تھا پھر اچنک میری نظر کمزور ہو گئی اور سر درد ٹھیک ہو گیا۔ اب کچھ دن پہلے سر درد پھر ہوا تو پتہ چلا کہ نظر مزید خراب ہو گئی ہے، مجھے ایک چیز کی دو تین شبیہیں نظر آنے لگتی ہیں تاہم یہ تکلیف عینک لگانے سے ٹھیک ہو جاتی ہے۔ مگر چونکہ نزدیک اور دور کی دونوں نظریں خراب ہیں اٰس لئے مستقل طور پر میں عینک استعمال نہیں کر سکتی۔ کیا لیزر اپریشن کروا کے میں اس عینک سے جان نہیں چھڑوا سکتی؟

    1. بہن وعلیکم السلام آپ مہربانی کرکے “نطر کی کمزوری” والا مضمون اچھی طرح پڑهیں انشاءاللہ آپ سارے سوالوں کا جواب مل جائے گا. مختصرا یہ ہے آپریشن کا خیال چهوڑیں یہ چالیس سال سے کم عمر والوں کے لئے مفید ہوتا ہے. اب نزدیک اور دور کے دو علیحدہ علیحدہ نمبر استعمال کرنا آپ کی مجبوری ہے. یہ آپ کی مرضی ہے ایک ہی عینک میں دونوں شیشے لگوا لیں کر لیں یا دو عینکوں میں.

  61. میری عینک کا نمبر -3.0 ہے میں  لیزر اپریشن کروانا چاہتا ہوں اٰس کا  کا خرچہ کتنا ہوتا ہے؟

    1. محترم حافظ صاحب اخراجات کے بارے میں کوئی قطعی جواب دینا میرے لئے ممکن نہیں۔ کئی رفاہی اور سرکاری ادروں میں مفت بھی ہوتا ہے، کئی میں بہت کم ریٹ پر بھی۔ تاہم یہ سہولت زیادہ تر پرائیویٹ ہسپتالوں میں ہی میسر ہے اور سب میں کافی مہنگا ہے۔ مختلف عوامل اس کے اخراجات پر اثر انداز ہوتے ہیں مثلاً

      • مشینیں مختلف لیولز کی ہیں کئی کے پاس پرانے ماڈلز ہیں کئی نے جدید ترین ماڈلز خرید رکھے ہیں۔ جدید مشینوں کی جہاں کوالٹی بہت بہتر ہے وہیں اں کی قیمتیں بھی بہت زیادہ ہیں۔
      • پھر اپریشن کے اندر استعمال ہونے والی ٹیکنیکس مختلف ہیں کئی ٹیکنیکس میں اضافی مشینوں کا استعمال کرنا ہوتا جو خرچے کو مزید بڑھا دیتی ہیں۔
      • پھر مختلف اداروں اور افراد کی اپنی ساکھ ہے جس کے حساب سے وہ اپنے ریٹس رکھتے ہیں۔
  62. ڈاکٹر صاحب میرا نام وسیم ہے۔ میری عمر 35  سال ہے۔ میری دور کی نظر کمزور ہے۔ دائیں آنکھ کا نمبر -12.0 اور بائیں آنکھ کا نمبر -10 ہے۔ میرا کام کی نوعیت ایسی ہے کہ سارا دن کمپیوٹر استعمال کرنا پڑتا ہے۔ اکثر آنکھوں میں درد رہتا ہے۔ اگر لیزر کرواؤں تو کتنا خرچہ ہو گا؟ برائے مہربانی جلد جواب دے دیں۔

    1. آپ کے سوال کی مکمل تفصیلات پہلے سے لکھی موجود ہیں آپ مہربانی فرما کر میرے مضمون کا دوبارہ غور سے مطالعہ کریں.

  63. میری دور کی نظر کمزرو ہے 0.50 یا 0.75 کی عینک مجھے تجویز کی گئی ہے۔ میں لیزر کے ذریعے علاج کروانا چاہتا ہوں رہنمائی کیجئے

    1. افتخار صاحب آپکی نظر کی کمزوری بہت معمولی سی ہے آپ عینک کو کیوں استعمال نہیں کرتے؟ لیزر اپریشن کافی مہنگا ہوتا ہے اس لئے تبھی کروانا چاہئے جب بہت مجبوری ہو۔ البتہ اگر پیسہ آپ کے لئے اتنا اہم نہیں تو اپریشن تو بالکل ممکن ہے۔ آپ بسم االلہ کیجئے ڈاکٹر تو تیار بیٹھے ہیں۔

      1. ڈاکٹر صاحب کتنا خرچہ ہو گا؟ اور کتنے دن آرام کرنا ہو گا؟

  64. Assalamoalekum,

    Masha Allah your work and information of your website is very beneficial for us.

    My sister is of 32 years old. She felt difficulty her distance vision since age of 12 yrs. Since then till yet her eyes number increased and now is -6. We now plan for her Laser operation to get rid of glasses. She is married and having 2 kids.

    There are 2 questions to your kind self. Plz reply.
    1. Is it safe for her and short term, long term side effect or any type of risk
    2. In karachi from where we should get do this operation. Trust able Dr. and reasonable charges.

    Thank you and Jazak Allah
    Sister.

    Note: if possible plz give answer in Urdu

    1. وعلیکم السلام
      آپ کا اس حقیر سی کاوش کو پسند فرمانے کا شکریہ. اگر آنکھ میں کوئی دیگر بیماری نہ ہو (جیسا کہ آپ کے خط سے محسوس ہو رہا ہے کہ کوئی اور نقص موجود نہیں ہے) تو اس آپریشن سے بہت فائدہ ہوتا ہے. یہ بہت اچھا آپریشن ہے بشرطیکہ جدید طریقہ کار کو اختیار کیا گیا ہو. کوئی نقصان نہیں ہوتا. تاہم ایک اہم گذارش یہ ہے کہ یہ آپریشن کوئی لازمی ضرورت نہیں ہے بلکہ زیادہ تر لوگوں کے لئے یہ تعیش میں آتا ہے. اور ظاہر ہے جائز تعیش حرام نہیں تاہم مشکل میں پڑ کر یہ علاج کروانا یا قرض لے کر یہ علاج کروانا کوئی اچھی بات نہیں ہے. میری بہن اتنی دنیا عینک لگا کر زندہ ہے، ان کا کونسا کام نہیں ہو رہا! میری بات کو مثبت انداز میں لیجئے ناراض مت ہوئیے گا. جہاں تک اخراجات کا تعلق ہے وہ بہت زیادہ ہوتے ہیں. مشینیں بہت زیادہ مہنگی ہیں، سیکھنے والوں کو بہت سی صلاحیتیں اور پیسہ صرف کرنا پڑتا ہے، علاوہ ازیں یہ کوئی مجبوری والا آپریشن بهی نہیں ہے اس لئے پوری دنیا میں یہ آپریشن مہنگا ہے. جہاں تک قابل اعتماد ادارے اور ڈاکٹر والی بات ہے کراچی تو ایسے لوگوں سے بهرا پڑا ہے. بہت سے ڈاکٹر اور بہت سے ادارے کراچی میں قابل تحسین کام کر رہے ہیں آپ کسی کو بھی منتخب کر سکتے ہیں. میرے لئے کسی ایک کا نام تجویز کرنا ممکن نہیں.

  65. ڈاکٹر صاحب لیزر کروانے سے کیا نظر ہمیشہ کے لئے ٹھیک ہو جاتی ہے؟ کوئی سائیڈ ایفیکٹ تو نہیں ہوتے؟

    1. بیٹے نمرہ آپ کے سارے سوالوں کا تفصیلی پہلے دیا جا چکا ہے، ازراہ کرم میرے آرٹیکل اور نیچے والے سوالات کے جوب غور سے پڑھیں آپ کو سب سوالوں کے جواب مل جائیں گے۔

  66. ڈاکٹر صاحب میری عمر 26 سال ہے اور میری دور کی نظر کمزور ہے۔ میں لینز بھی استعمال کرتی ہوں لیکن عام روٹین میں عینک استعمال کرتی ہوں۔ میں اٰس کا مستقل علاج کروانا چاہتی ہوں۔ لیزر سے کوئی سائیڈ ایفیکٹ تو نہیں ہوتا؟ کیا ایس کے بعد نظر ہمیشہ ٹھیک رہتی ہے؟ اور کتنا خرچہ ہوتا ہے؟ پلیز میری اس بارے میں تفصیل سے رہنمائی کریں۔

  67. سلام سر! میری دائیں آنکھ کی نظر کمزور ہے اور اس کا نمبر 3.6 ہے جبکہ بائیں آنکھ بالکل ٹھیک ہے۔ میں عینک استعمال نہیں کرتا اس لئے مجھے اکثر سر درد رہتا ہے۔ میری عمر 28 سال ہے۔ جب سکول میں تھا تو میری آنکھ میں ایک دانہ نکل آیا تھا اس کا علاج کرنے کے لئے ایک آئی سپیشلسٹ ڈاکٹر صاحب نے میری دائیں آنکھ میںتقریباً پانچ انجیکشن لگائے تھے۔ شاید اُسی کے اثر سے یہ آنکھ کمزور ہو گئی ہے! مہربانی کر کے مجھے تفصیل سے مشورہ دیں۔

    1. محترم عمر صاحب وعلیکم السلام میں معذرت خواہ ہوں کہ جواب لیٹ دے رہا ہوں۔ آپ نے جو انجیکشن والی کہانی بتائی ہے اس کی وجہ سے بہتر ہے آپ ایک دفعہ کسی آئی سپیشلسٹ سے معائنہ کروائیں۔ اکثر اوقات سٹیرائیڈ انجیکشن لگائے جاتے ہیں اور ان کی وجہ سے سفید موتیا کے بن جانے کا بہت زیادہ امکان ہوتا ہے۔ ایسی صورت میں تو کئی دفعہ اپریشن کی ضرورت ہوتی ہے۔ اگر یہ بات نہ ہو تو باقاعدگی سے عینک استعمال کرنے سے آپ کا سر کا درد صحیح ہو سکتا ہے۔

  68. السلام علیکم جناب ڈاکٹر صاحب میری نظر کافی عرصہ سے کمزور ہے پہلے چیک کروائی تھی،لیکن عینک نہ لگائی،جس کی وجہ سے نظر مزید کمزور ہوگئی۔آج نظر پھر چیک کروائی تو رزلٹ یہ ہے رائٹ سائیڈ SPH:-1.00, CYL:1.5, AXIS:100 لیفٹ سائیڈ SPH: – 3.25 میرا پروگرام ہے کہ لیزر کے ذریعہ سے علاج کروالیا جائے۔ اب ایک ڈاکٹر سے مشورہ کیا ہے وہ کہتا ہے کہ پہلے چھ ماہ یا سال عینک استعمال کرو پھر لیزر آپریشن ممکن ہے میری عمر اس وقت سینتیس سال ہے جزاک اللہ

    1. محترم ملک صاحب وعلیکم السلام میرا مضمون ذرا دوبارہ غور سے پڑھیں آپ کو اپنے سوالوں کا جواب مل جائے گا. پہلی بات یہ ہے کہ آپ کی نظر ہلکی سی کمزور ہے زیادہ نہیں ہے. دوسری بات یہ ہے کہ کمزوری بڑھنے کی وجہ یہ نہیں ہے کہ چونکہ عینک نہیں لگائی اس لئے کمزوری بڑها گئی ہے. تیسری بات یہ ہے کہ آپ اب بزرگی کی سرحدوں کو چھونے لگے ہیں اب بہتر ہوگا کہ آپریشن نہ کروائیں. آپریشن ہو سکتا ہے فائدہ بهی ہو گا لیکن کچھ عرصے بعد نزدیک کی نظر تو کمزور ہونی ہی ہے عمر کے مطابق پهر اس کے لئے تو عینک استعمال کرنی ہی پڑے گی. پھر سفید موتیا کے بننے کا عمل بهی شروع ہو جاتا ہے. اور آگر اس کا آپریشن ہو تو اس سے بهی عینک اتر سکتی ہے. بہرحال بجٹ کے حساب سے کوئی بھی حکمت عملی اختیار کی جا سکتی ہے.

  69. سر میرا بیٹا 6 سال کا ہے وہ کتاب کو بہت قریب رکھ کر پڑحتا ہے، مجھے کسی ڈاکٹر صاحب کی طرف رہنمائی کریں تاکہ میں اپنے بیٹے کا معائنہ کروا سکوں۔

  70. السلام علیکم ، محترم ڈاکٹر صاحب میری عمر 44 سال ہے اور میری دور کی نظر مائنس 0.5 کمزور ہے، میں لیزر کی مدد سے اپنی نظر مکمل ٹھیک کروانا چاہتا ہوں۔ اس پر کتنا خرچ آئے گا اور کتنا عرصہ تک میری نظر ٹھیک رہے گی ، مجھے شوگر یا کوئی اور مرض نہیں ہے۔ جزاک اللہ وحید احمد ریاض

    1. محترم وحید ریاض صاحب وعلیکم السلام لیزر ٹریٹمنٹ اس عمر میں نہیں کی جاتی. عموماً چالیس کی عمر سے پہلے مناسب ہوتی ہے.

    2. محترم وحید ریاض صاحب وعلیکم السلام آپ کے سارے سوالوں کا تفصیلی پہلے دیا جا چکا ہے، ازراہ کرم میرے آرٹیکل اور نیچے والے سوالات کے جوابات کو غور سے پڑھیں آپ کو سب سوالوں کے جواب مل جائیں گے۔

  71. salam dr.
    i m myopic(-10 right eye,-7 left eye) with high astigmatism. my glasses number is frequently changing after every three to four months, even i cant see properly with glasses. My consultant suggested me for lens replacement surgery as early as possible. what should i do in this case, go for lens replacement or not?

    1. دیکھیں ایمن یہ جو بات ہے کہ باربار نمبر تبدیل ہو جاتا ہے اور وہ بھی بہت تھوڑے عرصے بعد یہ بہت اہم علامت ہے۔ اِس کی وجہ سے قرنیہ مخروطیہ کے ٹیسٹ ضرور کروائیں۔ اِسی طرح کالا موتیا کے ٹیسٹ بھی کروائیں یہ بھی کلیئر کروائیں کہ کہیں پردہ بصارت تو بہت کمزور نہیں ہو گیا۔ اِن صورتوں میں اپریشن کافی سوچ سمجھ کر ہی کیا جاتا ہے اور اُس کا طریقہ کار بھی مختلف ہو جاتا ہے۔

  72. ڈاکٹر صاحب مجھے یہ پوچھنا ہے کہ کیا سائلنڈریکل نمبر بھی لیزر اپریشن سے ٹھیک ہو سکتا ہے؟ اور کیا لیسک اپریشن کروا لینا چاہئے؟

  73. جناب میری دور کی نظر کمزور ہے اور میں چشمہ لگانا نہیں چاہتا۔ پلیز کوئی آسان سا حل تجویز کر دیں!!!!

    1. محترم عمیر صاحب آپ کے سارے سوالوں کا تفصیلی پہلے دیا جا چکا ہے، ازراہ کرم میرے آرٹیکل اور اس سے متعلقہ سوالات کے جوابات کو غور سے پڑھیں آپ کو سب سوالوں کے جواب مل جائیں گے۔

      آسان ترین حل تو یہی ہے کہ اللہ تعالیٰ کی طرف سے ملنے والی اس کمزوری کو ھقیقت سمجھ کر قبول کریں اور عینک استعمال کریں۔

  74. السلام علیکم ڈاکٹر صاحب میں ایک ویب ڈیزائنر ہوں۔ میرے کام کی نوعیت اس طرح کی ہے کہ مجھے دس بارہ گھنٹے روزانہ لیپ ٹاپ استعمال کرنا پڑتا ہے۔ میں اس کو چھوڑ نہیں سکتا کیونکہ یہی میرا ذریعہ آمدن ہے۔ پچھلے چودہ سال سے میں عینک استعمال کررہا ہوں اب میری عمر 30 سال ہے۔ شروع میں نمبر 1.50 تھا اب میرا نمبر 6.0 ہو گیا ہے۔ میں نے دو ہسپتالوں میں چیک کروایا ہے دونوں نے اپریشن کا کہا ہے۔ وہ کہتے ہیں اس سے نظر مزید گرنا بند ہو جائے گی۔ کیا اس اپریشن سے مزید کمزور ہونا بند ہو گی یا کچھ بہتری بھ آئے گی؟ یعنی میرا عینک کا نمبر بھی کچھ کم ہو گا یانہیں؟ مجھے یہ بھی بتائیں کہ مجھے کتنی دیر کام سے اجتناب کرنا ہو گا؟ کیا اس کے بعد میں اپنا جاب جاری رکھ سکوں گا یا نہیں؟

  75. السلام علیکم سر میں اپنے بھائی کی طرف سے بہت پریشان ہوں۔ اُن کی نظر بہت کمزور ہے۔ بچپن سے عینک بھی لگی ہوئی ہے۔ اُن کی نظر اب اور کمزور ہوتی جا رہی ہے میں آپ سے مشورہ کرنا چاہتا ہوں۔ آپ کراچی میں کب اور کہاں ملیں گے؟ میں جانتا ہوں شفا تو اللہ نے دینی ہے ہو سکتا ہے اللہ آپ کو ذریعہ بنا دے۔

    1. محترم معتصم جمیل صاحب وعلیکم السلام آپ کی پریشانی ہی اس سارے آرٹیکل کا موضوع ہے سارے سوالوں کے تفصیلی جوابت دینے کی کوشش کی گئی ہے۔ ازراہ کرم میرے آرٹیکل اور متعلقہ سوالات کے جوابات کو غور سے پڑھیں آپ کو سب سوالوں کے جواب مل جائیں گے۔ میں کراچی میں نہیں ہوتا لیکن وہاں اتنے اچھے اچھے ادارے موجود ہیں آپ کسی سے بھی رابطہ کر سکتے ہیں۔ میرے بارے میں آپ یہاں کلک کر کے معلومات لے سکتے ہیں۔

  76. ڈاکٹر صاحب میری عمر 56 سال ہے اور میری عینک کا نمبر -4.50 ہے۔ پلیز میری رہنمائی کریں کیا میں لیزر اپریشن کروا سکتا ہوں؟ کیا اس سے میری نظر عینک کے بغیر بحال ہو جائے گی؟

    ملک احمد خان [مردان]

    1. محترم ملک احمد خان صاحب آپ کی پریشانی ہی اس سارے آرٹیکل کا موضوع ہے سارے سوالوں کے تفصیلی جوابت دینے کی کوشش کی گئی ہے۔ ازراہ کرم میرے آرٹیکل اور متعلقہ سوالات کے جوابات کو غور سے پڑھیں آپ کو سب سوالوں کے جواب مل جائیں گے۔ میرے بارے میں آپ یہاں کلک کر کے معلومات لے سکتے ہیں۔

  77. سلام میری عمر 23 سال ہے اور میں MBA سٹوڈنٹ ہوں۔ میری نظر سات سال سے کمزور ہے۔ میرا سوال یہ ہے کہ کیا میں لیر اپریشن کروا سکتہ ہوں؟ کیا اس کا مجھے فائدہ ہو گا؟

    1. تنزیلہ بیٹی مجھے تو یہی محسوس ہو رہا ہے کہ آپ کا لیزر سے علاج ہو سکتا ہے لیکن بہت بہتر ہو اگر آپ میرے پیج “نظر کی کمزوری” کا مطالعہ کرکے اپنی کیفیت کا تجزیہ کر لیں۔ تاہم اس کے باوجود آخری فیصلہ تو اُس وقت تک نہیں ہو سکتا جب تک آپ کی آنکھوں کا کوئی آئی سپیشلسٹ صاحب باقاعدہ معائنہ نہ کریں۔

  78. میری صرف دور کی نظر کمزور ہے۔ میری عینک کا نمبر دائیں آنکھ میں -5.25 اور بائیں آنکھ میں -5.0 ہے۔ میں عینک نہیں لگانا چاہتی کیا کروں؟

  79. Assalam-o-Alaikum Sir,
    I hope you are fine and enjoying best of health and spirit.
    sir meri right eye ka ainak ka number -5.00 hay or left eye ka number -4.75.
    I want to get rid of glasses!
    mein yeh poochna chaahti hoon laser treatment per approximately kitna kharcha aey ga?
    Waiting for your reply sir,
    Jazakillah.

  80. ڈاکٹر صاحب بات یہ ھے کہ 2006 میں مَیں نے آنکھوں کا لیزر آپریشن کروایا تھا لاھور ، لیزر ویژن ہسپتال سے۔ میری دائیں آنکھ کی نظر منفی ۲۔۵ اور بائیں آنکھ کی نظر منفی ۲۔۷۵ کمزور تھی اور میری نظر مزید کمزر ھونا رک چکی تھی میری عمر اس وقت ساڑھے چوبیس سال تھی ڈاکٹر صاحب شروع ے کچھ سال آپریشن کے بعد سب کچھ نارمل تھا سوائے اک چیز کے کہ نیند کے بعد ب سو کے اٹھتی تھی تو یکدم آنکھیں نہیں کھول سکتی تھی کیونکہ ایسا کرے سے آنکھوں میں درد شروع ھو جاتا تھا اور آنکھوں سے پانی بہنے لگتا تھا اور دھوپ اور روشنی میں یکدم جانے سے بھی یہی حالت ھوتی تھی۔ چنانچہ احتیاط کرتی تھی دو-تین سال پہلے دوبارہ نظر میں کمزوری محسوس کی اور اسی ہسپتال سے نظر دوبارہ چیک کروائی جہاں سے آپریشن کروایا تھا تو نظر واقعی ہی کمزور تھی انھوں نے پھر سے چشمہ لگانے کا مشورہ دیا لیکن کوئی دوائی یا ڈراپس وغیرہ نہیں دیے مَیں نے دوبارہ چشمہ نہیں لگایا کیونکہ اک تو ویسے ہی اس سے چِڑ ھو چکی تھی دوسرا اگر چشمہ ہی لگانا ھوتا تو مَیں پہلے ہی آپریشن کیوں کرواتی چنانچہ ایسا ہی چلتا رہا اب دسمبر 2011 سے مزید کمزوری محسوس کر رہی ھوں مگر چشمہ پھر بھی نہیں لگایا ڈاکٹر صاحب اس وقت مَیں پاکستان میں نہیں ھوں اس لیے مذکورہ بالا ہسپتال سے چیک اپ نہیں کروا سکتی گزشتہ کچھ دنوں سے آنکھوں اور سَر میں شدید درد ہے گردن کے پٹوں میں بھی مہربانی کر کے میری رہنمائی کریں کہ مَی کیا کروں پریشان بھیرہتی ھوں کیونکہ مَیں نے سا ے کہ لیزر آپریشن کے `10 سال بد انان مکمل اندھا ھو جاتا ہے

    1. محترمہ صنم صاحبہ السلام علیکم سب سے پہلی بات تو یہ ہے کہ آپ کی یہ معلومات بالکل غلط ہیں کہ دس سال کے بعد نظر بالکل ختم ہو جاتی ہے۔ قطعاً ایسی کوئی بات نہیں ہے۔ اصل بات یہ ہے بعض لوگوں کی نظر کی کمزوری کے واپس آنے کا خطرہ ہوتا ہے جس کا ذکر یا تو ڈاکٹر کرتے نہیں ہیں یا اگر ڈاکٹر یہ بات بتاتے ہیں تو اُس وقت ہمیں چونکہ علاج کا بہت شوق ہوتا ہے اِس لئے ہم اِس پر زیادہ توجہ نہیں دیتے اور جس بات کا زیادہ امکان ہوتا ہے اُس پر توجہ دیتے ہیں یعنی یہ امید کہ صحیح نتیجہ نکلے گا اور کمزوری واپس نہیں آئے گی۔ اور حقیقت یہ ہے کہ عقلمندی بھی یہی ہے۔ مثبت پہلو پر توجہ دینی چاہئے اور یہ بھی ایک حقیقت ہے کہ اکثریت میں یہ کمزوری واپس نہیں آتی۔ اب اگر کچھ کمزوری واپس آ گئی ہے تو پریشان نہ ہوں۔ اِس کا ایک حل تو یہ ہے کہ برداشت کریں تھوڑی کمزوری کی موجودگی میں عینک لگانا لازمی نہیں ہوتا۔ دوسرا حل یہ ہے عینک استعمال کر لیں۔ اور تیسرا حل یہ کہ ایک دفعہ پھر لیزر لگوا لیں تاکہ جتنی کمزوری واپس آ گئی ہے اُتنی تصحیح دوبارہ کر دی جائے۔ یہ کیسے ہوتی ہے اِس کے لئے ایک دفعہ آپ کو میری ویب سائیٹ کہ متعلقہ پیج کا مطالعہ کرنا ہوگا۔ جہاں تک آپ کی سردرد اور پٹھوں کی درد کا تعلق ہے مجھے ایسے لگتا ہے کہ اِس کا تعلق نظر کی کمزوری سے نہیں ہے۔ میری ویب سائیٹ پر ایک صفحہ سردرد سے متعلق ہے اُسے پڑھنے سے آپ کو اپنے سوال کا جواب مل جائے گا۔
       

      1. Assalaam-o-Alaikum sir,
        I am a university student my age is 21 years. Sir At the age of 12 years I realized that I often feel difficulty in seeing black-board in class. At the age of 14 I came to know that my eye sight is much weak and number is minus -3.25,
        Now the number has increased to -4.75 of right eye and -5.00 of left eye.
        would the laser treatment be suitable for me? how much will it cost???

        1. وعلیکم السلام محترمہ تحریم ظفر صاحبہ مجھے توقع ہے کہ آپ نےویب سائیٹ میں دی گئی معلومات کا مطالعہ کر لیا ہو گا۔ اُس میں آپ کے سوالوں کا جواب موجود ہے۔ یہ کمزوری کئی لوگوں کی انکھوں کی ایک فطری کیفیت ہوتی ہے اِس کو صحیح معنوں میں بیماری نہیں کہا جا سکتا۔ اِس لئے اِس پر پریشان ہونے کی ضرورت نہیں۔ ہاں البتہ اگر آپ عینک نہیں لگانا چاہتیں تو آپ لیزر سے علاج کروا لیں اب آپ کی عمر میں یہ علاج ہو سکتا ہے۔ اِس پر آنے والے اخراجات مختلف ہیں اُن کا آپ کو اندازہ علاج کے مختلف مراکز سے رابطہ کر کے ہی معلوم ہو سکتا ہے۔

          1. Thank you so much for your kind reply sir. May Allah bless you with more and more success and prosperity in your field.
            sir can I have information about which hospitals are providing quality services in field of laser eye treatment?
            Once again thanks a lot sir.
            Jazakillah

    1. Respected Nasir Qayyum I could’t undestand properly what do you want to know! What is your age? Two most common reasons are development of cataract and damage to retina. The third most common reason is just error of refraction. Please write the detail. Thanks Dr Asif Khokhar  

      1. ڈاکٹر صاحب میری بہن کی عمر 20 سال ہے وہ چشمہ لگاتی ہے اور کبھی کبھی لینز بھی استعمال کرتی ہے۔ کیا ان سے چھُٹکارا مل سکتا ہے؟ کسی نے آپ سے اپریشن کروایا تھا تو اُس نے آپ کا بتایا۔ خرچہ کیا ہے؟ ڈاکٹر راشد منہاس

  81. السلام علیکم محترم ڈاکٹر صاحب میں نے اپریشن کروانا ہے۔ مجھے +3.5 نمبر کی عینک لگی ہوئی ہے۔ میں عینک سے نجات چاہتا ہوں۔ میں نے آپ کا مضمون پڑھ لیا ہے۔ آپ مجھے خرچہ بتادیں تو آپ کی بہت مہربانی ہو گی۔

  82. A-O-A Dr. Sahib
    Meri omer 58 saal hai. 2-3 saal sey mahsoos ker raha hon meri door ki nazzer kamzoor hai. Nazdeek ki Nazer 3.5+ hai. Kia operation karwana mery liye monaseb ho ga? Door aur Nazdeek ki Ainnek sey najat mil jay gi?
    W Salam Mohammad Shafiq

    1. محترم شفیق صاحب السلام علیکم شوگر اگر کنٹرول ہو تو سرجری کا کوئی مسئلہ نہیں ہوتا۔ البتہ اگر عینک سے نظر ٹھیک ہو رہی ہے تو پھر اپریشن ضرورت نہیں۔ جب موتیا بن جائے گا اور عینک لگانے سے بھی نظر صاف نہیں ہو گی تو اُس وقت اگر آپ ملٹی فوکل لینز ڈلوا لیں گے تو دور اور نزدیک دونوں کی عینک کی ضرورت نہیں رہے گی۔ والسلام ڈاکٹر آصف کھوکھر

  83. السلام علیکم ڈاکٹر صاحب میری عمر 22 سال ہے مجھے +4.50 نمبر کی عینک لگی ہوئی ہے، میں عینک سے نجات چاہتا ہوں۔ پلیز مجھے مشورہ دیں کہ مجھے کیا کرنا چاہئے؟ اگر فیکو سرجری کروانی ہے تو اُس پہ کتنا خرچہ آئے گا؟ شکریہ

    1. عزیر بیٹا السلام علیکم میں معذرت خواہ ہوں کی جواب لیٹ دے رہا ہوں۔ اگر میرے مضمون نظر کی کمزوری آپ مطالعہ کریں گے تو انشاءاللہ آپ کو ساری معلومات مل جائیں گی۔ اگر پھر بھی سمجھ نہ ائے تو آپ دوبارہ پوچھ لینا۔ والسلام ڈاکٹر آصف کھوکھر

اگر کوئی سوال آپ پوچھنا چاہیں تو یہاں لکھ کر پوسٹ کر دیں۔ اپنی رائےیا تجویز سے مجھے آگاہ فرمانا چاہیں تو یہاں لکھ کر پوسٹ کر دیں میں انشاءاللہ جلد از جلد آپ سے رابطہ کروں گا۔