کیا اس وقت مملکت پاکستان Soft Coup کے زیر اثر چل رہی ہے؟

ایکسپریس نیوز: کیا اس وقت مملکت پاکستان Soft Coup کے زیر اثر چل رہی ہے؟
جاویدہاشمی: دیکھیں! ملک کے اندر جو حالات و واقعات ہو رہے ہیں، جیسے کرپشن اور دہشتگردی ہے۔ کراچی انسانی گوشت کی سب سے بڑی منڈی بن چکا ہے، جہاں روزانہ سینکڑوں افراد مارے جا رہے ہیں۔ اگر دیکھا جائے تو وہاں رینجرز کا آنا اور ان کے اقدامات قابل قبول ہیں۔ کیوں کہ سیاسی قوتیں کمزور ہو گئی ہیں۔
آج کسی ایک قوت کا ملک سنبھالنا مشکل ہے اور یہ کسی کے بس میں بھی نہیں ہے۔ چاروں ستونوں میں سے کسی ایک نے بھی اگر حکومت سنبھالی تو ملک اسی روز بے قابو ہو جائے گا۔ خواہ نواز شریف چاہے کہ اس کی باتیں ایسی سنی جائیں جیسے شاہِ ایران کی سنی جاتی تھیں یا عسکری قوتیں کہیں کہ ان کی باتیں ایسے سنی جائیں جیسے ایوب، ضیاء الحق اور مشرف کی سنی جاتی تھی، یہ ممکن نہیں۔ بہت سارے تجربات سے گزرنے کے بعد اب جو تجربہ ہو رہا ہے، وہ زیادہ بہتر ہے کہ اپنی حدود کے اندر رہتے ہوئے مشاورت کے ذریعے کام کئے جائیں، تو اس لئے یہ حکومت نواز شریف کی ہے نہ راحیل شریف کی۔
پہلی دفعہ پاکستان کے اصل مسائل کو حل کرنے کا قابل عمل ایجنڈا وقت کے ساتھ ترتیب پا رہا ہے، لیکن اگر اس کے توازن میں خرابی آئی تو پاکستان کے مسائل بہت زیادہ بڑھ جائیں گے۔ اس لئے یہ حکومت کسی ایک کی نہیں، سب کی ہے اور سب کے لئے ہونی چاہیے۔ لیکن کسی ایک قوت کو مقررہ حد سے تجاوز نہیں کرنا چاہیے۔ اس وقت ملک میں مل جل کر کام ہو رہا اور یہی اس وقت پاکستان کی ضرورت ہے، کوئی ایک ستون تنہا حکومت نہیں کر سکتا۔ احتساب بھی ضروری ہے لیکن احتساب صرف سیاست دانوں کا نہیں ہونا چاہیے، جیسے آج کل ہو رہا ہے۔

Author: Dr Asif Mahmood Khokhar

Senior eye surgeon with special interest in Vitreoretinal, Oculoplastic, Laser, and Phaco surgeries

Leave a Reply

Be the First to Comment!

اگر کوئی سوال آپ پوچھنا چاہیں تو یہاں لکھ کر پوسٹ کر دیں۔ اپنی رائےیا تجویز سے مجھے آگاہ فرمانا چاہیں تو یہاں لکھ کر پوسٹ کر دیں میں انشاءاللہ جلد از جلد آپ سے رابطہ کروں گا۔