کراچی کا علمی بحران

کراچی کا علمی بحران

تحریر عمران زاہد

جناب رعایت اللہ فاروقی صاحب کا “کراچی کا علمی بحران” آج اطمینان سے بیٹھ کر پڑھا۔ پڑھ کر جہاں ان کے تجزیے اور مشاہدے کی صداقت کی خوشی ہوئی وہاں حالات کی یہ سنگینی جان کر شدید دکھ ہوا۔ بلاشبہ کراچی کا علمی ورثہ اس سے چھن چکا ہے۔ کراچی کو اپنے قدموں پر کھڑا ہونے کے لئے کئی سال لگیں گے ۔۔۔۔ پھر بھی تباہی اور بربادی کے اثرات جاتے جاتے جائیں گے۔
:
قوم پرستی کے شیدا و والہ جو میری پچھلی پوسٹوں پر قوم پرستی کا منجن بیچتے رہے ہیں وہ قوم پرستی کی تباہی کو جاننا چاہتے ہیں تو رعایت صاحب کا مضمون پڑھ لیجیے۔ قوم پرستی افراد کو نہیں، نسلوں کو تباہ کر دیتی ہے۔
:
کراچی کا علمی بحران – پہلا حصہ

کراچی کا علمی بحران – دوسرا حصہ

کراچی کا علمی بحران – تیسرا حصہ

کراچی کا علمی بحران – آخری حصہ
https://www.facebook.com/Riayat.Farooqui/posts/1458140400876617

اگر کوئی سوال آپ پوچھنا چاہیں تو یہاں لکھ کر پوسٹ کر دیں۔ اپنی رائےیا تجویز سے مجھے آگاہ فرمانا چاہیں تو یہاں لکھ کر پوسٹ کر دیں میں انشاءاللہ جلد از جلد آپ سے رابطہ کروں گا۔

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.