چائنہ کے خلاف حي على الجهاد

📌📌پاکستانیو ھوشیارباش📌📌

مولانا فضل الرحمن خلیل معروف جہادی لیڈر ہیں،جب کشمیری جہادی تنظیم حرکت المجاہدین فعال تھی آپ اس کے امیر تھے آج کل انصار الامہ کے سربراہ ہیں آپ نے انکشاف کیا ہے کہ امریکہ نے کچھ عرصہ پہلے اپنے ایک “اسلامی ایجنٹ” کے ذریعے ان سے رابطہ کیا تھا کہ آپ چائنہ کے خلاف جہاد کا اعلان کریں ہم آپ کا ساتھ اور امداد دیں گے، مولانا نے انکار کیا اور امریکہ کو مطلوب دہشت گرد ڈکلئیر ہوئے، آمدم برسر مطلب کچھ دنوں سے عالمی اور انڈین میڈیا کے زیر اثر یہ خبریں خوب اچھالی جا رہی ہیں کہ چائنہ میں مسلمانوں پر عرصہ حیات تنگ کیا جاچکا ہے، حجاب اور داڑھی پر پابندی لگائی گئی ہے، ان خبروں پر مرچ مصالحہ لگا کر کہیں بانداز طنز و مزاح تو کہیں جذباتی لب و لہجہ اور اسلوب دیندار طبقے میں “حی علی الجہاد” کی صدا لگائی جا رہی ہیں، بہت سارے عبداللہ، عبدالرحمن نامی اکاؤنٹ جنہیں دہلی سے را کے سوشل میڈیا ایکسپرٹس ہینڈل کر رہے ہیں وہ پاکستانی نوجوانوں کے جذبات سے جہاد اور دین کے نام پر کھلواڑ کرنا شروع کرچکے ہیں، سازش یہ ہے کہ انڈیا اور مغربی طاقتیں مل کر “سی پیک” کو ہر قیمت پر ناکام بنانا چاہتی ہیں اپنے مذموم مقاصد کی تکمیل کے لیے وہ کسی بھی اقدام سے گریز نہیں کریں گی، پہلے مرحلے میں چائنہ میں حجاب اور داڑھی کے مسئلے کو بنیاد بنا کر پاکستان میں احتجاج کی کوشش کی جائے گی، کچھ جذباتی قسم کے مذہبی راہنماؤں سے بیانات دلوائے جائیں گے کہ چائنہ کی مصنوعات کا بائیکاٹ کیا جائے پھر آہستہ آہستہ کسی خفیہ مقام سے کسی گمنام تنظیم کی ویڈیو جاری ہوگی جو چائنہ کے مظلوم مسلمانوں کی آزادی کے لیے جہاد کا اعلان کرے گی ترانے اور نعرے بنائے گی، “دشمن ملک” کو نقصان پہنچانے کے لیے ان کے مفادات پر حملوں کا ہدف دیا جائے گا یوں سی پیک منصوبہ نشانہ بنے گا، یہ ہے انڈیا کا منصوبہ اور اس کے ابتدائی ڈرافٹ پہ کام شروع ہوچکا ہے_
دیسی لبرلز اور ان کے دودھ شریک ایرانی حاشیہ بردار مذہبی بھائی بہت مہارت سے سوشل میڈیا میں یہ کام کرنے لگے ہیں_
سو اے نوجوانان پاکستان! الحذر الحذر …آپ الرٹ رہیں چائنہ کے مسلمان امریکہ کی کل آبادی سے زیادہ ہیں انڈیا کے مسلمانوں سے زیادہ محفوظ اور خوش ہیں، وہ اپنے حقوق کا تحفظ کرنا جانتے ہیں انہوں نے آپ کو پکارا ہے نہ پکاریں گے، یوں بھی نریندر مودی اور ٹرامپ کی طرح لی کیچیانگ نے مسلمانوں کو تڑیاں بھی نہیں لگائی ہیں، جہاد ہی کرنا ہے تو انڈیا ہے ناں، بنئے سے تو اپنا پرانا حساب کتاب بھی ہے اور کشمیر کی مائیں بہنیں اور بیٹیاں روز تمہیں پکار بھی تو رہی ہیں …..!

Author: Dr Asif Mahmood Khokhar

Senior eye surgeon with special interest in Vitreoretinal, Oculoplastic, Laser, and Phaco surgeries

Leave a Reply

Be the First to Comment!

اگر کوئی سوال آپ پوچھنا چاہیں تو یہاں لکھ کر پوسٹ کر دیں۔ اپنی رائےیا تجویز سے مجھے آگاہ فرمانا چاہیں تو یہاں لکھ کر پوسٹ کر دیں میں انشاءاللہ جلد از جلد آپ سے رابطہ کروں گا۔

  Subscribe  
Notify of