پیدائشی اندھے بچوں کیلئے خوشخبری

بائیو ٹیکنولوجی کا کمال
Human Gene Therapy
FDA has approved the treatment after going through all parameters.
Adeno-associated virus is used as vector.
RPE 65 Gene
جین وائرس میں منتقل کیا جاتا ہے اور وائرس انجیکشن کے ذریعے آنکھ میں منتقل کیا جاتا ہے۔
انجیکشن کی قیمت 8 کروڑ روپے رکھی گئی ہے۔ شاید ایک ملی لیٹر کا دسواں حصہ۔ یعنی چھوٹا سا قطرہ۔
اس سے ریٹینا کے بعض سیل دوبارہ بن جاتے ہیں اور ایک قسم کے نابینا پن کا علاج ہو جاتا ہے۔ پیدائشی اندھے دیکھنا شروع کر دیتے ہیں۔ جن بچوں کا علاج کیا گیا ہے اب تک ایک سال ہو چکا ہے ابھی تک وہ ٹھیک ہیں۔
ہو سکتا ہے اس طرح کی دوسری بیماریوں کے جینز بھی میسر آ جائیں۔ انشاءاللہ جلد ہی یہ ٹیکے سستے بھی ہو جائیں گے۔

اگر کوئی سوال آپ پوچھنا چاہیں تو یہاں لکھ کر پوسٹ کر دیں۔ اپنی رائےیا تجویز سے مجھے آگاہ فرمانا چاہیں تو یہاں لکھ کر پوسٹ کر دیں میں انشاءاللہ جلد از جلد آپ سے رابطہ کروں گا۔

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.