اصل سازش کیا ہے؟ ایک اہم زاویہ نظر

غور کیجئے ، سلمان تاثیر زرداری حکومت کا گورنر تھا۔ واقعہ بہت شدید تھا۔ معاملہ گورنر کے قتل کا تھا۔ قتل سرکاری محافظ کے ہاتھوں سرکاری گن سے ہوا تھا۔ حکومت اپنی تھی۔ مذہبی طبقہ بھی کچھ نہ کچھ بیک فٹ پر جا چکا تھا۔ پھانسی کا کام تب بھی ہو سکتا تھا، مگر معاملے کی مذہبی حساسیت کے پیش ِ نظر حیرت انگیز طور پر پی پی پی نے سلمان تاثیر سے ہاتھ اٹھا لیے تھے۔ میڈیا اور عدالت دونوں جگہ سلمان تاثیر لا وارث نظر آتا رہا۔ سوال یہ ہےکہ ان سب مواقع کے باوجود زرداری نے جس بل میں ہاتھ نہیں گھسائے میاں صاحب نے وہاں بازو کیوں گھسیڑ دیئے؟ جب کہ شدید نوعیت کے مذہبی عناصر سے ملک پہلے ہی بر سرِپیکار تھا۔ جہاں ریمنڈ ڈیوس چھوڑا جا سکتا ہے،کیا وہاں ممتاز قادری کو عمر قید کے سیل میں چھوڑا نہ جا سکتا تھا؟ اشتعال کے قتل میں جو لچک قانون دیتا ہے اس سے فائدہ نہ اٹھایا جا سکتا تھا؟ آخر پورے ملک کے مجرم مشرف پہ دانت کچکچا کے بھی تو شریف برادران پیچھے ہٹ گئے تھے. یہاں بھی یہ ہو سکتا تھا. یقینا ! مگر یوں نہ ہوا۔ تو ظاہر ہوا، معاملہ اتنا سادہ نہیں۔ حکومت نے بہت سوچ سمجھ کے بعض مقاصد کے تحت یہ اقدام کیا ہے۔
اصل یہ اقدام نہیں اصل وہ اقدامات ہیں جو اس مرحلے کے ٹیسٹ کے بعد کئے جائیں گے۔اب اس بات پر بھی غور کیجئے کہ پنجاب میں خواتین بل کے تحت میاں صاحبان پہلے ہی علما کرام اور بعض اپنے ہی پارٹی قائدین بلکہ ایک طرح سے مشرقی تہذیب کےبھی مقابل ڈٹے ہوئے ہیں۔

اب آپ وزیرِ اعظم کا وہ بیان یاد کیجئے کہ جس میں آپ نے فرمایا تھا کہ اب پاکستان کا مستقبل “لبرل پاکستان” ہے۔ چنانچہ آپ یہ دیکھئے کہ وزیرِ اعظم شرمین عبید چنائے کو ایوانِ وزیرِ اعظم میں بلا کے پذیرائی بخشتے ہیں۔ پھر یہ دیکھئے کہ پھانسی کے لئے عین اس دن کا انتخاب کیا جاتا ہے جب عبید اپنا آسکر جیتتی ہے اور یوں میڈیاایک علامت کے اختتام اور دوسری کے آغاز کا منظر دکھانے لگتا ہے۔ یوں ہمیں یہ علامتوں کاکھیل بھی لگنے لگتا ہے۔

ہمارا مشاہدہ ہے کہ ووٹر کو متاثر کرنے والے کاموں کے علاوہ حکومت اگر کسی معاملے میں سنجیدگی دکھائے تو ضرور ان کو کہیں اور سے اس سنجیدگی دکھانے کے لئے مجبور کیا جا رہاہوتا ہے۔اس پر آپ خود غور کر لیجئے کہ اسلامی ملک اور مشرقی معاشرے میں لبرل ازم ، تحفظ ِ عورت کے نام پر غیر منطقی بل اور ایک خوابیدہ پھانسی سے پاکستان میں کسی حکومت کے ووٹ بڑھ سکتے ہیں یا گھٹ سکتے ہیں ۔پوری بات سمجھ میں آجائے گی ۔ واضح رہے توہینِ رسالت کی شق 295C کے سلسلے میں پہلے ہی مغربی دنیا اور یورپی یونین پاکستان کے در پے ہے ہیں- یہ وہ معروضی حالات جن کا اشارہ ہے کہ بات نہ قانون کی بالادستی کی طرف بڑھ رہی ہے اور نہ عورتوں کے تحفظ کی طرف بلکہ بات صرف نواز شریف کے وژن “لبرل پاکستان” کی طرف بڑھ رہی ہے۔

ایسا اس لئے بھی لگتا ہے کہ حکومت جن معاملات میں علما کو ساتھ لے کے چل سکتی ہے۔ نظریاتی کونسل سے مشاورت کر سکتی ہے۔ وہ ان معاملات میں بھی انھیں للکار کے چل رہی ہے ۔ شاید اس لئے تاکہ آہستہ آہستہ علما کو آئندہ کے لئے ان چیزوں کا عادی بنایا جاسکے اور ان کی مزاحمت کی حدیں بھی چیک کر لی جائیں ۔اگر ایسا ہے تو اسلامسٹوں کو یہ بھی جان لینا چاہئے کہ اب یہ خالی خولی حکومتی دعوے یا خواہشات نہیں رہیں گی، بلکہ حکومت اس سلسلے میں بے حد سنجیدہ نظر آتی ہے ۔ ظاہر ہے جو کام ووٹ کی قیمت پر بھی انتہائی سنجیدگی سے کیا جا رہا ہو اس کی شدت یا اس کے پسِ پشت طاقت کی شدت کا اندازہ کرنا آپ کے لئے کچھ زیادہ مشکل نہیں ہونا چاہئے۔ یقیناحکومت ہر حد تک جانے کے لئے خود کو تیار کر چکی ہے۔

چنانچہ اب یہ مذہبی طبقے کا امتحان ہے کہ وہ کس طرح سے ان حالات سے سیکھتا ہے اور کس طرح سے اپنا کردار اداکرتا ہے۔اگر آج مذہبی طبقے اپنے گروہی نظریات سے اٹھ کے بظاہر نظر آتے مستقبل کو نہیں دیکھتے۔ اکٹھے ہو کے موزوں ترین لائحۂ عمل تیار نہیں کرتے تو یہ بھی ہو سکتا ہے کہ یہ حالات محض اتفاقات کا نتیجہ ہوں اور یہ بھی ہو سکتا ہے کہ علما کو کل یہاں تاجکستان کے ڈاڑھیاں نوچنے اور پردے کھینچنے کے مناظر بھی دیکھنے پڑیں۔ ضرورت ممتاز قادری کی پھانسی میں الجھ جانے کی نہیں ۔ضرورت پوری تصویر کو سمجھنے کی ہے۔ یاد رہے ان پھانسیوں پر اور اقدار کی پامالی پر میڈیا آپ کا ساتھ نہیں دے گا۔ آپ کو اپنی یہ لڑائی خود ہی لڑنی ہوگی ، بلکہ ہو سکتاہے کل آپ سے سوشل میڈیا بھی چھن جائے۔ بہرحا ل سرِدست لبرلز کامیاب ہیں،حکومت بڑی تیاری اور مستعدی سے اپنے پتے پھینک رہی ہے اور مذہی طبقہ بساط پر سوائے پٹنے کے کچھ اور کرتا نظر نہیں آتا۔
ابوبکر چوہدری

Author: Dr Asif Mahmood Khokhar

Senior eye surgeon with special interest in Vitreoretinal, Oculoplastic, Laser, and Phaco surgeries

Leave a Reply

Be the First to Comment!

اگر کوئی سوال آپ پوچھنا چاہیں تو یہاں لکھ کر پوسٹ کر دیں۔ اپنی رائےیا تجویز سے مجھے آگاہ فرمانا چاہیں تو یہاں لکھ کر پوسٹ کر دیں میں انشاءاللہ جلد از جلد آپ سے رابطہ کروں گا۔